سائبر کرائمز کے بڑھتے واقعات، متعلقہ اداروں سے مشاورت کرنیکا فیصلہ

سائبر کرائمز کے بڑھتے واقعات، متعلقہ اداروں سے مشاورت کرنیکا فیصلہ

  

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی نے سائبر کرائمز کو روکنے کے لیے شراکت داروں کی مشاورت سے حکمت عملی مرتب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔علی خان جدون کے زیر صدارت قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں ملک میں سائبر کرائمز کے بڑھتے واقعات کے خلاف متعلقہ اداروں سے مشاورت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔چیئرمین قائمہ کمیٹی نے کہا کہ ہمارے ادارے فیس بک اور ٹویٹر سے کچھ نہیں ہٹا سکتے۔ سائبر کرائمز کے لیے کمیٹی کا الگ اجلاس بلایا جائے گا جس میں وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی، اطلاعات، داخلہ اور کابینہ ڈویڑن کی مشاورت کے بعد سائبر کرائمز سے نمٹنے کے لیے حکمت عملی مرتب کی جائے گی۔وفاقی وزیر آءٰی ٹی خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ بجلی چوری کے خاتمے کے لئے الیکٹروکیور ٹیکنالوجی پر وزیراعظم اور وزیر توانائی کو بریفنگ دی گئی ہے۔ اس منصوبے کی کامیابی کے لئے بیوروکریسی ایک اہم شراکت دار ہے اور اس کے تعاون سے ہی اس مں صوبے سے مطلوبہ نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں۔

سائبر کرائمز 

مزید :

صفحہ آخر -