ڈیمو کریٹک کا امیگریشن پالیسی کا تنقیدی جائزہ لینے کا اعلان

  ڈیمو کریٹک کا امیگریشن پالیسی کا تنقیدی جائزہ لینے کا اعلان

  

واشنگٹن (اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) امریکی کانگریس کے ارکان کے درمیان اہم خصوصی معاملات پر اختلافات کی خلیج بدستور وسیع ہو ر ہی ہے جس کا بنیادی سبب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی امیگرنٹس مخالف پالیسی ، مالیاتی و معاشی امور پر سرمایہ دار طبقے کےساتھ ترجیحی سلوک ہے ۔ یہ خلیج پارٹی لائن کے مطابق نہیں بلکہ جہاں ڈیمو کریٹک ارکان جہاں ٹرمپ کےخلاف سخت رویہ اختیار کرتے ہیں وہاں بعض ریپبلکن ارکان بھی وقتاً فوقتاً اپنے ضمیر کی آواز کے مطابق ٹرمپ کے نامناسب موقف کےخلاف ڈیمو کریٹک ارکان کا ساتھ دیتے ہیں ۔ جشن آزادی کی تعطیلا ت پر کیپیٹل ہل سے رخصت ہونے سے قبل کانگریس کے دونوں پارٹیوں کے ارکان انسانی ہمدردی کی بنیاد پر میکسیکو بارڈر پر رکے ا میگرنٹس کی امداد کےلئے چار ارب ساٹھ کروڑ ڈالر کا فنڈ منظور کیا تھا، لیکن واپس آتے ہی ڈیمو کریٹک ارکان نے صدرٹرمپ کی غیر قانونی تار کین وطن کےخلاف مہم پر سخت تنقید شروع کر دی ہے ۔ کانگریس کے ڈیمو کریٹک ارکان نے اعلان کیا ہے کہ وہ ٹرمپ انتظامہ کی امیگریشن پالیسی کا تنقیدی جائزہ لیں گے اور خاص طور پر امیگرنٹس کیلئے سرحدی شہروں میں قائم حراستی مراکز کے اندر تارکین وطن کی خواتین و بچوں کےسا تھ ہونےوالے غیر انسانی سلوک کی پوری تفتیش کریں گے اور اس میں ملوث امیگریشن حکام کےخلاف تادیبی کارروائیاں کریں گے ۔ ا یو ا ن نمائندگان کی ہوم لینڈ سکیورٹی کمیٹی کے چیئرمین بینی تھامپسن نے ایک بیان میں کہا ہے ہوم لینڈ سکیورٹی کا عملہ انتہائی نا اہل ہے جہاں با لا ئی سطح پر انتظامی بحران پایا جاتا ہے ۔ ایسے نا اہل افراد کو اجازت نہیں دی جاسکتی کہ قوانین نافذ کرنے کا سہارا لےکر امیگرنٹس پر مظالم ڈھا ئیں ۔

ڈیموکریٹک اعلان

مزید :

صفحہ اول -