سندھ کے صحرائی علاقوں میں ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے کوششیں تیز

  سندھ کے صحرائی علاقوں میں ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے کوششیں تیز

  

سکھر (بیورو رپورٹ)صوبہ سندھ کے صحرائی علاقوں میں ٹڈی دل(کیڑے مکوڑوں )کے خاتمے کے لئے کوششیں تیز کردی گئیں ، فضائی اسپرے کے ساتھ مختلف گاڑیوں کے ذریعے بھی کیڑے مار اسپرے کیا جارہا ہے، فضائی اسپرے کے ذریعے 5ہزار ایکڑ اراضی کو ٹڈی دل سے محفوظ بنادیا گیا ہے، صالح پٹ، ٹھری میرواہ و دیگر متاثرہ علاقوں میں اسپرے کا کام جاری ہے ۔ سندھ کے صحرائی علاقوں میں داخل ہونیوالے ٹڈی دل کے مکمل خاتمے کے لئے وفاقی وزیر برائے فوڈ سیکریٹری اینڈ ریسرچ صاحبزادہ محبوب سلطان ، سیکریٹری ڈاکٹر ہاشم پوپلزئی اور ڈائریکٹر جنرل پلانٹ پروٹیکشن ڈاکٹر فلک ناز کی ہدایات پر فضائی اسپرے کا سلسلہ تیزی سے جاری ہے جبکہ صوبائی حکومت کی جانب سے بھی وفاقی ادارے کے ساتھ ملکر ٹڈی دل کے مکمل خاتمے کے لئے کوششیں تیز کردی گئی ہیں ۔ فضائی اسپرے میں کیپٹن سید شاکر علی اور کیپٹن محمد زمان چیمہ حصہ لے رہے ہیں جبکہ انجینئر عبدالقادر اور صحرا میں اینٹومالوجسٹ فخر الزمان بھی ان کے ہمراہ ہیں ۔ ذراءع سے معلوم ہوا ہے کہ 16جون سے شروع ہونیوالے فضائی اسپرے کے ذریعے خیرپور کے صحرائی علاقے میں 5ہزار ایکڑ تک زمین کو ٹڈی دل سے محفوظ کردیا گیا ہے، ٹڈی دل(کیڑے مکوڑوں ) کے خاتمے کے لئے خصوصی جراثیم کش اسپرے کا استعمال کیا جارہا ہے، متاثرہ علاقوں میں خصوصی جہاز کے ذریعے وقفے وقفے سے فضائی اسپرے کیا جارہا ہے ۔ اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر خیرپور محمد نعیم سندھو کا کہنا ہے کہ ٹڈی دل سے خیرپور اور سکھر کے صحرائی علاقے متاثر ہوئے ہیں ، ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ، ٹھری میرواہ اور نارا کے درمیان صحرائی مقام پر کیڑے مکوڑے بڑی تعداد میں موجود تھے، جن کا مکمل خاتمہ کرکے 5ہزار ایکڑ زمین کو محفوظ بنادیا ہے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -