اسلام میں جبراً مذہب تبدیل کرنے کی اجازت نہیں ، کاشف شیخ

  اسلام میں جبراً مذہب تبدیل کرنے کی اجازت نہیں ، کاشف شیخ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری کاشف سعید شیخ نے کہا ہے کہ اسلام میں جبراً مذہب تبدیل کرنے کی اجازت نہیں ہے،اسلام ایک امن پسند اور احترام انسانیت کا درس دینے والا دین ہے،یہی وجہ ہے کہ بھارت کے مقابلے میں پاکستان میں سب سے زیادہ اقلیتی برادری کی جان ومال اوراملاک کو حفاظت حاصل ہے ۔ اگر کوئی فرد اپنی مرضی ومنشا کے مطابق اسلام قبول کرے تو ملک کا آئین وقانون اس کو مکمل تحفظ دینے کا پابند ہے ۔ انہوں نے آج ایک بیان میں کہاکہ ٹھٹہ سے تعلق رکھنے والی نومسلم بچی نور فاطمہ کے مسلمان ہونے پر واویلا بلاجوازاور گرفتاریاں تشویش ناک ہیں ،اسلام کے نام پر معرض وجود میں آنے والے ملک پاکستان میں اسلام وجہاد کا نام لینا جرم بنادیا گیا ہے،ٹھٹہ سے تعلق رکھنے والی سابقہ پایل دیوی اور اب نور فاطمہ نے میڈیا اور عدالت میں واضح ودوٹوک بیان دیا ہے کہ وہ برضاورغبت اسلام قبول اور مقامی مسلم نوجوان سے شادی کرلی ہے، اسکے باوجود اس معاملے کو متنازعہ ،اسلام کیخلاف جھوٹا پروپیگنڈا اور گرفتاریاں ومذہبی رہنماءوں کو حراساں کرنا افسوس ناک عمل ہے ۔ ٹھٹہ انتظامیہ اپنا جانبدارانہ رویہ ترک کرے ۔ صوبائی رہنماء نے زور دیا کہ ٹھٹہ واقعے کو بنیاد بناکر معاشرے میں انتشارو انارکی پھیلانے کانوٹس،گرفتاریاں اور دینی ومذہبی رہنماءوں کو حراساں کرنا بند کیا جائے ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -