مریم نواز کی طرف سے ویڈیو سامنے آنے کے بعد جج ملک ارشد کی اعلیٰ شخصیت سے ملاقات کا انکشاف

مریم نواز کی طرف سے ویڈیو سامنے آنے کے بعد جج ملک ارشد کی اعلیٰ شخصیت سے ...
مریم نواز کی طرف سے ویڈیو سامنے آنے کے بعد جج ملک ارشد کی اعلیٰ شخصیت سے ملاقات کا انکشاف

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی طرف سے ویڈیو سامنے آنے کے بعد احتساب جج ارشد ملک نے قائم مقام چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس عامر فاروق سے ملاقات کی ۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں مسلم لیگ  ن  کی طرف سے جاری کی گئی حالیہ ویڈیو اور مبینہ الزمات پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ احتساب جج کی کی قائم مقام چیف جسٹس سے ملاقات 40منٹ جاری رہی تاہم اسلام آ باد ہائی کورٹ کی جانب سے ملاقات کی تفصیلات جاری نہیں کی گئی ۔دوسری طرف  اٹارنی جنرل آف پاکستان انور منصور خان نے کہا ہے کہ حکومت کا مریم نواز کی پیش کردہ ویڈیو سے کوئی تعلق نہیں تاہم کسی کی اجازت کے بغیر ویڈیو بنانا اور نشرکرنا  قابل سزا جرم ہے ، اس معاملے پر عد لیہ کو نوٹس لینا چاہئے ۔ نجی ٹی وی سے گفتگوکرتے ہوئے انور منصور خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف  کے خلاف فیصلے   کے وقت اس ویڈیو کا  کوئی معاملہ نہیں تھا کسی کی اجازت کے بغیر ویڈیو بنانا اور نشر کرنا جرم ہے  جس کی سزا 3 برس قید اور 10 لاکھ روپے جرمانہ ہے اور یہ سزا جرم میں شریک  لوگوں پر بھی لاگو ہو گی ۔

مزید :

قومی -