ویڈیو کا معاملہ بہت گھمبیر ہے ، جلد ازجلد حل ہونا چاہئے ، اٹارنی جنرل آف پاکستان

ویڈیو کا معاملہ بہت گھمبیر ہے ، جلد ازجلد حل ہونا چاہئے ، اٹارنی جنرل آف ...
ویڈیو کا معاملہ بہت گھمبیر ہے ، جلد ازجلد حل ہونا چاہئے ، اٹارنی جنرل آف پاکستان

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) اٹارنی جنرل آف پاکستان انورمنصورخان نے کہاہے کہ ویڈیو کے معاملے میں جج صاحب کی تذلیل ہوئی ، اس معاملے کوعدالتی معاملے میں آناچاہئے ، اگر یہ معاملہ عدالتی معاملات میں نہ آئے گا تو اس کاعدلیہ پر بہت زیادہ اثر پڑے گا ،ویڈیوسامنے آنے کے بعدبہت دباﺅ ہے اور معاملات بہت گھمبیر بھی ہیں، یہ معاملہ عدلیہ پر بہت اثر انداز ہورہاہے ،اس کوجلد از جلد حل کرناچاہئے ۔ دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے انور منصور خان نے کہاہے ویڈیو کے معاملے میں جج صاحب کی تذلیل ہوئی ہے ، یہ ان کااختیار ہے کہ وہ عدالت سے رابطہ کرسکتے ہیں لیکن یہ کہنا کہ جج صاحب کوعدالت جانا چاہئے ، یہ غلط ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہائیکورٹ نگران کورٹ ہے بلکہ احتساب عدالت کے فیصلے پر اپیل بھی اسی کورٹ میں ہوتی ہے ، اس کیس کے اندر یہ کہنا ہے کہ یہ جو فیصلہ ہے یہ دباﺅ میں دیا گیاہے تو یہ ن لیگ کی جانب سے جو اپیل فائل کی ہوئی ہے ، اس میں شواہد دے سکتے ہیں ، اس پر عدالت عالیہ یہ دیکھ کر بتا سکتی ہے کہ اس ڈاکو منٹس پر جو فیصلہ دیا گیا ہے وہ غلط ہے ۔ اٹارنی جنرل نے کہاہے کہ وزیر اعظم نے واضح کردیاہے کہ اس معاملے میں حکومت سامنے نہیں آئے گی کیونکہ جن کے درمیان میں یہ ایشوز ہیں ،وہی یہ بات طے کرسکتے ہیں کہ کسی چیز کو تحویل میں لینا چاہئے یانہیں لینا چاہئے ۔ ان کا کہناتھا کہ جس طرح سے معاملات چل رہے ہیں ، اس کو عدالتی معاملات میں آنا چاہئے اور اگر یہ عدالتی معاملات میں نہیں آئیں گے تو ہماری عدلیہ بہت زیادہ مثاثر ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ اگر چیف جسٹس آف پاکستان ویڈیو کے معاملے پر نوٹس لیتے ہیں تو یہ ان کی صوابدید ہے ۔انہوں نے کہا کہ ویڈیوسامنے آنے کے بعدبہت دباﺅ ہے اور معاملات بہت گھمبیر بھی ہیں، یہ معاملہ عدلیہ پر بہت اثر انداز ہورہاہے ،اس کوجلد از جلد حل کرناچاہئے ۔

مزید :

قومی -