کورونا! حفاظتی اقدامات اور حکومتی انتظامات، بہتر نتائج شروع؟

کورونا! حفاظتی اقدامات اور حکومتی انتظامات، بہتر نتائج شروع؟

  

کورونا وبا پر قابو پانے کے حوالے سے قائم نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کی طرف سے وزیراعظم عمران خان کو بریفنگ میں بتایا گیا ہے کہ اب تک اس وائرس سے متاثرین کو بچانے کے لئے جو کوشش کی گئی، اس کے بہتر نتائج ملے ہیں اور اب بتدریج یہ وبا کم ہو رہی ہے،اس میں عوام کا تعاون بھی شامل ہے،وزیراعظم نے توقع ظاہر کی اور عوام سے اپیل کی کہ وہ حفاظتی اقدامات پر پوری طرح عمل کریں، خصوصاً عیدالاضحی کے ایام میں خاص خیال رکھیں تو ہی بہتری کا عمل جاری رہ سکے گا۔ بریفنگ کے مطابق مُلک بھر کے ہسپتالوں میں پہلے سے موجود سہولتوں کے ساتھ مزید 1227 آکسیجن بیڈز مہیا کر دیئے گئے ہیں، ٹیسٹنگ کی صلاحیت یومیہ60ہزار سے زیادہ ہو گئی ہے، لیبارٹریز دو سے بڑھا کر 1525کر دی گئی ہیں، کورونا کے لئے مُلک بھر میں 1525وینٹی لیٹرز مختص ہیں، جبکہ ایس او پیز پر عمل کی بھی بھرپور کوشش کی جا رہی ہے، بریفنگ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ متاثرہ مریضوں کی تعداد میں کمی اور صحت مند ہونے والوں کی تعداد بڑھی ہے،اسی طرح اموات میں بھی کمی ہوئی ہے۔اس حوالے سے مزید اقدامات کا بھی تذکرہ کیا گیا ہے تاہم یہ بریفنگ اس حوالے سے مثبت ہے کہ بیڈز کی تعداد کے ساتھ ساتھ وینٹی لیٹرز کی کمی بھی نہیں، اور اب یہ ملکی سطح پر تیار کر لئے گئے ہیں،اسی طرح ٹیسٹ کرنے کی صلاحیت میں اضافہ اطمینان بخش ہے، اس سے وبا کا پتہ چلتا اور علاقائی لاک ڈاؤن میں بھی مدد ملتی ہے۔ تاہم اصل احتیاط وہ ہے جس کی توقع پاکستانی عوام سے کی گئی ہے کہ توجہ عیدالاضحی کے تہوار اور قربانی کی طرف دلائی جارہی ہے۔یہ تہوار تو بہت زیادہ احتیاط کی توقع کرتا ہے، مویشی منڈیوں میں ڈسپلن برقراررکھنا اور اجتماعی قربانی کی اہمیت کا احساس کرنا ہر شخص پر لازم ہونا چاہئے۔

مزید :

رائے -اداریہ -