پشاور،منشیات فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز

پشاور،منشیات فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز

  

پشاور(کرائم رپورٹر) کیپٹل سٹی پولیس پشاورنے معاشرے کو منشیات سے پاک کرنے اور نوجوان نسل کو اس کے مضر اثرات سے بچانے کی خاطر رواں سال کے دوران خصوصی کریک ڈاون کا آغاز کر رکھا ہے،پولیس نے جاری کریک ڈاون کے دوران اب تک متعدد کامیابیاں حاصل کی ہیں جن کے دوران 4 ہزار سے زائد کیسز درج کر کے 5 ہزار سے زائد منشیات کے مکروہ دہندے میں ملوث افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے، گرفتار ہونے والے ملزمان کے قبضہ سے مجموعی طور پر 2ہزار 8 سو کلو گرام سے زائد چرس، 180 کلو گرام ہیروئن، 588 کلو گرام افیون کے ساتھ ساتھ 34 کلو گرام آئس بھی برآمد کی جا چکی ہے، رواں سال کے ابتدائی چھ ماہ کے دوران ڈیڑھ ہزار لیٹر سے زائد شراب بھی برآمد کر لی گئی ہے جبکہ ملوث افراد کے خلاف مقدمات درج کرکے جیل کی سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا گیاہے،سی سی پی او کے دفتر سے جاری اعداد و شمار کے مطابق حالیہ دنوں میں بھانہ ماڑی کی حدود سے دیسی شراب بنانے کی فیکٹری بھی سیل کی گئی ہے جس میں ملوث دو ملزمان کو گرفتار کیا جا چکا ہیسی سی پی او محمد علی گنڈا پورنے رواں سال کے دوران ہونے والی کارروائیوں پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے نوجوان نسل کو منشیات خصوصا آئس سے کے مضر اثرات اور تباہ کاریوں سے بچانے کی خاطر خصوصی آگاہی مہم تیز کرنے اور اس حوالے سے علاقہ عمائدین اور پی ایل سی ممبران کے ساتھ میٹنگز کرنے کی بھی ہدایت کی ہے سی سی پی او محمد علی گنڈا پور نے آگاہی مہم کے ساتھ ساتھ منشیات فروشوں اور سمگلرز کے خلاف کریک ڈاون میں بھی مزید تیزی لانے کی ہدایت کی ہے تاکہ معاشرے سے اس ناسور کے خاتمہ کو ممکن بنایا جا سکے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -