نوجوان لڑکے اور لڑکی کو غیرت کے نام پر قتل کرنے والے ملزمان گرفتار

  نوجوان لڑکے اور لڑکی کو غیرت کے نام پر قتل کرنے والے ملزمان گرفتار

  

پشاور(کرائم رپورٹر) کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے رات کی تاریکی میں نوجوان لڑکے اور لڑکی کو قتل کرنے والے تین ملزمان کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران دو جولائی کو رات کی تاریکی میں نوجوان سٹوڈنٹ وقاص اور مسماۃ (س)کو قتل کرنے کا اعتراف کرتے ہوئے بغیر تجہیز و تکفین کے الگ الگ مقامات پر خاموشی کے ساتھ دفن کرنے کا انکشاف کیا، پولیس نے دونوں قبروں کی شناخت کر کے قبروں کی حفاظت اورملزمان کی جانب سے لاشوں کو کسی نامعلوم جگہ منتقل کرنے کے خدشے کے پیش نظر پولیس گارڈ تعینات کر دیا ہے جبکہ پولیس نے قبر کشائی کی خاطر عدالت سے رجوع کر لیا ہے جس کے بعد مقتولین کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گاتفصیلات کے مطابق ایس پی سٹی وقار عظیم کھرل کو خفیہ ذرائع سے اطلاع ملی تھی کہ تھانہ آغا میر جانی کی حدود دیر کالونی میں مبینہ طور پر ایک لڑکے وقاص ولد خیرالدین اور ایک لڑکی مسماۃ (س) کو غیرت کے نام پر قتل کرنے کے بعد خاموشی کے ساتھ دفنا دیا گیا ہے، اطلاع کو مصدقہ جان کر ڈی ایس پی سبرب اختراز خان کی سربراہی میں ایس ایچ او تھانہ آغا میر جانی علی سید خان اور تفتیشی افسران نے انکوائری شروع کرتے ہوئے مختلف ذرائع سے معلومات حاصل کیں جس کے دوران مقتولین کو بیدردی کے ساتھ قتل کرنے اور ان کو کسی نامعلوم مقام پر دفنانے کے ٹھوس شواہد حاصل کرنے کے بعد قتل میں ملوث تین ملزمان صالح محمد، نورالدین اور شہاب الدین کو گرفتار کر لیا گیا جنہوں نے ابتدائی تفتیش کید وران لڑکے لڑکی کو غیرت کے نام پر قتل کرنے اور بغیر تجہیز و تکفین کے دفن کرنے کا انکشاف کیا ہے، پولیس نے دونوں قبروں کی شناخت کر کے ملزمان کے ساتھیوں کی جانب سے لاشوں کی منتقلی کے خدشے کے پیش نظر قبروں پر پولیس گارڈ بھی تعینات کیاگیا، جبکہ پولیس نے پوسٹ مارٹم رپورٹ کی خاطر قبر کشائی کے لئے عدالت سے رجوع کر لیا ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -