عالمی اداروں کو جعلی پائلٹ لائسنس اور طیارہ حادثہ تحقیقات کا حصہ بنایا جائے

  عالمی اداروں کو جعلی پائلٹ لائسنس اور طیارہ حادثہ تحقیقات کا حصہ بنایا جائے

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)انٹرنیشنل فیڈریشن آف ائیر لائنز پائلٹس ایسوسی ایشن نے وزیراعظم عمران خان کو خط لکھ کر وزیر ہوابازی کی جانب سے بغیر تحقیقات پائلٹس کے لائسنس جعلی قرار دینے پر شدید تحفظات کااظہار کیا گیا ہے۔تنظیم نے مطالبہ کیا ہے کہ مبینہ جعلی لائسنسز کی تحقیقات میں ہوابازی سے متعلقہ عالمی اداروں کوبھی شامل کیاجائے۔کمرشل پائلٹوں کی عالمی تنظیم انٹرنیشنل فیڈریشن آف ائیر لائنز پائلٹس ایسوسی ایشن کے صدر کیپٹن جیک نیستکار نے وزیر اعظم عمران خان کے نام خط میں لکھا کہ ان کی تنظیم دنیا بھرمیں ایک لاکھ40 ہزار کمرشل پائلٹوں پر مشتمل ہے۔انہوں نے کہا کہ تمام آزاد مبصرین کے مطابق مسئلہ پاکستانی پائلٹس کا نہیں بلکہ خود پی آئی اے کا ہے۔ پاکستانی وزیر ہوابازی کے بیان کے اثرات یورپ میں پی آئی اے پر پابندی کی صورت میں سامنے آئے ہیں۔ تنظیم کا مطالبہ ہے کہ انٹرنیشنل سول ایوی ایشن آرگنائزیشن، ایاٹا اور انٹرنیشنل فیڈریشن آف ائیر لائنز پائلٹس ایسوسی ایشن کو پاکستان میں پائلٹس لائسنس اسکینڈل اور طیارہ حادثے کے خلاف تحقیقات کا حصہ بنایا جائے۔

پائلٹس ا

مزید :

صفحہ آخر -