سیلاب سے نمٹنے کیلئے انتظامات کی خود نگرانی کر رہا ہوں: عثمان بزدار

سیلاب سے نمٹنے کیلئے انتظامات کی خود نگرانی کر رہا ہوں: عثمان بزدار

  

وزیرآباد،جامکے چٹھہ(نا مہ نگار،نمائندہ خصوصی،نمائندہ پاکستان) وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے مون سون سیزن کے پیش نظر ممکنہ سیلاب سے نمٹنے کیلئے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے سے مختلف شہروں کے دور وں کا آغازکر دیا ہے -وزیر اعلی عثمان بزدار اس سلسلے میں خانکی ہیڈ ورکس گئے-وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے خانکی ہیڈ ورکس کا معائنہ کیااور ہیڈ ورکس کے مختلف حصے دیکھے-وزیر اعلی عثمان بزدار نے خانکی ہیڈ ورکس پر ممکنہ سیلاب سے نمٹنے کے لئے کئے گئے انتظامات کا معائنہ کیااورخانکی ہیڈورکس پر پانی کی آمد اور اخراج کی صورتحال کا جائزہ لیا-وزیراعلیٰ کو خانکی ہیڈ ورکس اور پنجاب کے دیگر دریاؤں میں پانی کی تازہ صورتحال سے آگاہ کیا گیا-وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ متعلقہ محکموں اور اداروں کو سیلاب کے خدشے کے پیش نظر الرٹ کر دیا گیا ہے -جہلم، چناب اور سندھ کے دریاؤں میں پانی کی 24 گھنٹے مانیٹرنگ کی جا رہی ہے-ممکنہ سیلاب سے نمٹنے کے لئے انتظامات کی خود نگرانی کر رہا ہوں - پنجاب کے دیگرہیڈورکس کا بھی دورہ کروں گا-خانکی ہیڈ ورکس 1892ء میں تعمیر کیا گیا-ایشیائی ترقیاتی بنک کے تعاون سے دریائے چناب پر نیا خانکی بیراج تعمیرکیا گیا ہے - خانکی بیراج کی اپ گریڈیشن کے منصوبے پر 21 ارب 30 کروڑ روپے لاگت آئی ہے -نیا خانکی بیراج تعمیر ہونے سے لوئر چناب کینال میں 12 ماہ 11500 کیوسک تک پانی کا بہاؤیقینی بنایا جا سکے گا-4680 کلومیٹر طویل نہری نظام کے 2925 چینلزکو بلا تعطل پانی مہیا ہو سکے گا-پنجاب کے 8 اضلاع گوجرانوالہ، حافظ آباد، شیخوپورہ، ننکانہ صاحب، جھنگ، چنیوٹ،فیصل آباداور ٹوبہ ٹیک سنگھ کی 3.301 ملین ایکڑاراضی کو سیراب کیا جا سکے گا-خانکی بیراج کی اپ گریڈیشن سے 6 لاکھ سے زائد کاشتکارفیملیز کو فائدہ پہنچے گا-انہوں نے کہا کہ اپ گریڈیشن کے بعد بیراج سے 8 لاکھ کیوسک پانی گزرنے کی گنجائش بڑھ کر 11 لاکھ کیوسک ہو گئی ہے -خانکی بیراج کی اپ گریڈیشن زرعی خوشحالی اور سرسبزپنجاب کی بنیاد ثابت ہو گا- زراعت کی ترقی و خوشحالی ہماری ترجیح ہے -سیلاب سے بچاؤ کے حوالے سے اپ گریڈیشن اہم سنگ میل ثابت ہو گی - وزیر اعلی عثمان بزدار کو سیکرٹری آبپاشی نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ وزیر آباد سے خانکی بیراج تک27 کلومیٹر طویل سڑک بھی تعمیر کی گئی ہے - خانکی بیراج کے قریب بنیادی مرکز صحت اورعوام کی تفریح کے لئے پارک بھی بنایا گیا ہے جبکہ ووکیشنل ٹریننگ سنٹر بھی قائم کیا گیا ہے -زراعت کی ترقی و خوشحالی ہماری ترجیح ہے۔سیلاب سے بچاؤ کے حوالے سے اپ گریڈیشن اہم سنگ میل ثابت ہو گی۔ جبکہ بیراج کیساتھ ہی 10 کروڑ روپے کی لاگت سے پارک کی تعمیر بھی کی گئی ہے جہاں گردونواح سے ہزاروں افراد سیر وتفریح کیلئے آتے ہیں۔ دورہ کے موقع پر مقامی صحافیوں کو کوریج سے منع کرتے ہوئے ٹائیگر فورس کے جوانوں سمیت کسی کو بھی آگے نہیں جانے دیا گیا۔وزیراعلیٰ کی آمد سے قبل سٹاف سے بھی موبائل فون لے لئے گئے۔صدر پریس کلب افتخار احمدبٹ اوراراکین نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے دورہ وزیرآباد کے موقع پرمقامی صحافیوں کونظر انداز کرنے پراورضلعی انتظامیہ اور مقامی انتظامیہ کے خلاف شدید احتجاج کیا۔وزیر اعلی عثمان بزدار کو خانکی بیراج کے کنٹرول روم میں ممکنہ سیلاب کے پیش نظر کئے گئے انتظامات کے بارے میں بریفنگ دی گئی جبکہ سیکرٹری آبپاشی نے وزیراعلیٰ کوخانکی ہیڈ ورکس پر پانی کی آمد و اخراج کے بارے میں بریف کیا-صوبائی وزیر ملک اسد کھوکھر، ایڈیشنل چیف سیکرٹری انفراسٹرکچر، سیکرٹری آبپاشی اور متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے-وزیر اعلی پنجاب کی خانکی ہیڈ آمد کواڈنیٹرانسپکشن ٹیم محمد احمد چٹھہ نے استقبال کیا وزیراعلی کی آمد سے پہلے پولیس نے تمام راستے سیل کر دیئے۔ مقامی میڈیا ورکرزپربھی کوریج کی سخت پابندی رہی۔تفصیلات کے مطابق وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کا کا دورہ ہیڈ خانکی بیراج12بج کر 21منٹ پر پہنچے جہاں ان کا ستقبال ترجمان پنجاب حکومت محمد احمد چٹھہ نے کیا کمشنر گوجرانوالہ،ڈپٹی کمشنراور مقامی انتظامیہ کے افسران بھی اس مو قع پر وہا ں مو جود رہے۔وزیر اعلی نے تقر یبا ڈیرھ گھنٹہ بیراج پر گزارے اور واپس لاہور روانہ ہو گئے ہیلی پیڈ تک تر جمان پنجا حکومت محمد احمد چٹھہ نے انھیں رخصت کیا پولیس کی بھاری نفر ی اس موقع پر ہیڈ بیراج اور اسکے ملحقہ سڑکوں پر تعینات رہی اور بیراج کی طرف آنے والے تمام راستوں کو سیل کر دیا گیاجسکی وجہ سے مقامی افرادکو سخت گرمی میں 5گھنٹے تک سخت تکلیف کا سامنا رہا جبکہ میڈیا کے تمام نمائندوں کو بھی کوریج کیلئے روک دیا گیا اور ریسٹ ہاؤس سمیت بیراج کے تمام اطراف پر میڈیا نمائندوں کو آگے جانے کی سخت پابندی لگائی گئی۔ سردار عثمان بزدارسے صوبائی وزیر آبپاشی محسن لغاری نے ملاقات کی-محسن لغاری نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے لئے افسران کی تقرری پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو مبارکباد دی-ملاقات میں جنوبی پنجاب کے لئے ملازمتوں کے مواقع پیدا کرنے اور نئے اضلاع و تحصیلیں بنانے کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا- وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کا قیام ہماری حکومت کا وعدہ تھا جو پورا کیاہے-جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام سے مقامی لوگوں کو کام کے سلسلے میں لاہور نہیں آنا پڑے گا-

دورہ

مزید :

صفحہ اول -