پی آئی اے میں گند صاف کر رہے ہیں، پابندی کے خلاف اپیل کرینگے

  پی آئی اے میں گند صاف کر رہے ہیں، پابندی کے خلاف اپیل کرینگے

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر ہوا بازی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ یورپی یونین سیفٹی ایجنسی کے ساتھ مکمل رابطے میں ہیں، پابندی کے خلاف جلد اپیل میں جائیں گے۔قومی اسمبلی میں جعلی لائسنسوں اور جعلی ڈگریوں کے معاملے پر اظہار خیال کرتے ہوئے غلام سرور خان نے کہا کہ اعتراض کرنے والے ذمہ دار، ہم تو ان کا گند صاف کر رہے ہیں۔ اپوزیشن کو تسلیم کرنا چاہیے کہ 658 لوگ ان کے دور میں جعلی ڈگریوں پر بھرتی ہوئے۔ یہ سارا کچھ 2010ء سے لے کر 2018ء تک ہوا۔ ہم ان کو نکالیں گے جو سفارش کے ذریعے آئے۔ سابق حکومت میں پیسے لے کر لائسنس کی تجدید کی جاتی تھی لیکن اب ہماری حکومت میں ایسا نہیں ہوگا۔ 26 پائلٹس نے غلط امتحانات دیئے جن کو گراؤنڈ کر دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ آپریشن یورپ سے پہلی بار معطل نہیں ہوا۔ یورپی ایوی ایشن کی جانب سے 2008ء میں بھی آپریشن معطل ہوئے تھے۔ پی آئی اے میں صفائی کریں گے تو اس کی نیک نامی ہوگی۔ جن لوگوں نے سرپرستی کی ان کیخلاف کریمنل مقدمات درج ہونگے۔ آنے والے دنوں میں آپریشن بحال ہوگا اور پی آئی اے ایک نئی ایئر لائن بنے گی۔قبل ازیں خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے ممبرقومی اسمبلی خواجہ آصف نے کہا ہے کہ ہندوستان اور کشمیر میں مسلمانوں پر گزشتہ ایک سال سے شدید ظلم ہورہا ہے، ہمارے ملک میں اقلیتوں کیخلاف سوشل میڈیا پر مہم چلائی جارہی ہے،اقلیتوں کا ہمارے ملک میں غیر محفوظ ہونا شرم کی بات ہے،یہ ہمارا فرض ہے کہ اقلیتوں کی عبادت گاہوں کو محفوظ بنائیں۔ مسلمانوں کی حکومت میں 1400 سالہ تاریخ میں اقلیتیں کبھی غیر محفوظ نہیں ہوئیں۔ پاکستان میں 60 کی دہائی میں برداشت اور یگانگت تھی۔ میں نے امریکہ میں عید کی نماز ایک گرجا میں ادا کی تھی۔کسی مذہب کو کسی دوسرے مذہب پر فوقیت حاصل نہیں۔ یہاں قائداعظم کو کافر اعظم کہا گیا تھا، بانی پاکستان کیخلاف تحریک چلائی گئی۔ پیپلز پارٹی کے رہنما سید نوید قمر نے کہا کہ اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کے مطالبہ کی حمایت کرتا ہوں،اقلیتی برادری کی دل آزاری نہیں ہونی چاہیے۔ مولانا عبدالاکبر چترالی نے کہا کہ اسلام میں دہشت گردی اور فرقہ واریت کا تصور نہیں ہے، اسلام تمام مذاہب سے محبت کا درس دیتا ہے۔اسلام ہمیں سکھاتا ہے کہ ایک پیغمبر کا منکر بھی مسلمان نہیں ہوسکتا۔حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی امن ومحبت کا درس دیا۔ ا سلام آباد میں جو نئے مندر کا شوشہ چھوڑا جارہا ہے،بیت المال سے تو اس کا تصور بھی موجود نہیں ہے۔وفاقی وزیر انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا کہ اقلیتوں کا مذاق اڑانا اور عبادت گاہوں پر حملہ کسی صورت برداشت نہیں ہماری حکومت قائداعظم کے ویژن کے مطابق اقلیتوں کے ساتھ کھڑی ہے ہم نے یورپی یونین کو مساجد بند کرنے اور حجاب پر پابندی کیخلاف بات کی ہے۔ہمیں اپنے رویے سے یہ ثابت کرنا ہے کہ ہم مودی جیسے نہیں ہیں۔

قومی اسمبلی

مزید :

صفحہ اول -