جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ،مسائل حل کے بجائے پیچیدہ ہوجائیں گے،کرامت شیخ

  جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ،مسائل حل کے بجائے پیچیدہ ہوجائیں گے،کرامت شیخ

  

ملتان (نیوز رپورٹر) پاک سرزمین پارٹی جنوبی پنجاب کے صدر و ممبر نیشنل کونسل کرامت علی شیخ نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب صوبہ کے حوالے سے جو اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ہم انہیں مسترد کرتے ہیں اس سے خطے کے عوام کو درپیش مسائل حل ہونے کی بجائے مزید پیچدہ صورتحال اختیار کر جائیں گے وفاق کی جانب سے جنوبی پنجاب صوبہ کے حوالے سے جو اعلان کیا گیا تھا اس پر مکمل عملدرآمد کیا جائے ناکہ اس خطے میں برٹش فارمولہ ڈیوائیڈ اینڈ رولز پر عمل کرکے خطے کے عوام کو باہم دست و (بقیہ نمبر44صفحہ7پر)

گریباں کی جانب دھکیلا جائے ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے عوام کا پچھلے 72 سالوں سے استحصال کیا جارہا ہے اب وقت کا تقاضہ ہے کہ ماضی کی روش کو ترک کرتے ہوئے اس کا ازالہ کیا جائے سیکرٹریٹ کے نام پر عارضی اقدامات اس خطے کی محرومیوں کا حل نہیں ہیں بلکہ ٹھوس اقدامات اٹھائے جائیں اور این ایف سی ایوارڈ کے تحت صوبوں کو ملنے والے فنڈز سٹی و ڈسٹرکٹ گورنمنٹ تک منتقل کیئے جائیں اور لوکل انتظامیہ کو بااختیار بنایا جائے اقتدار کے ثمرات نچلی سطح پر منتقل ہونے سے عوام میں احساس محرومی کا خاتمہ ہوگا انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت میں جنوبی پنجاب کو اے ڈی پی فنڈز جاری کیئے گئے تھے اس میں سے 80 فیصد فنڈز واپس لاہور منتقل ہوگئے تھے اور صرف 20 فیصد خرچ ہوئے تھے فنڈز کی واپسی کا سلسلہ بند کیا جائے اور مکمل فنڈز سے خطے میں تعلیم، صحت اور سٹریکچر کا نظام بہتر بنانے سمیت عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ بلدیاتی نظام کو فعال و خود مختار بنائے بغیر ہم ترقی نہیں کرسکتے ترقی یافتہ ممالک لوکل باڈی نظام کو ترجیح دے کر آگے بڑھ گئے ہیں پاک سرزمین کے چیئرمین سید مصطفی کمال کو ایک بار کراچی کی میئر شپ کا موقع ملا تو انہوں نے کراچی شہر کی تعمیر و ترقی کے لیئے مثالی اقدامات اٹھائے جنہیں عوام سمیت بیرون ملک بھی سراہا گیا انہوں نے کہا کہ وفاق اور صوبائی نمائندے عوام میں نظر نہیں آرہے لیکن پاک سرزمین پارٹی فلاحی کاموں میں پیش پیش ہے جس کا سہرا قائدین سید مصطفی کمال اور انیس قائمخانی کے سر جاتا ہے موجودہ حکومت اپنے ایجنڈے مطابق مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے اور پاک سرزمین پارٹی آئندہ مستقبل میں ایک بڑی جماعت کے طور پر ابھر کر سامنے آئے گی اور سید مصطفی کمال کی قیادت میں قوم کو ڈلیور بھی کرے گی ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان اور ایم کیو ایم لندن ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں الطاف حسین سے لاتعلقی ظاہر کرنے والے الطاف حسین کے پاکستان مخالف بیانات کی مذمت کرنے سے کیوں انکاری ہیں انہوں نے کہا کہ الطاف حسین کی پاکستان میں موجود باقیات کا خاتمہ ملک و کراچی کی بقاء کے لیئے لازمی ہے۔

کرامت شیخ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -