جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ،حقائق نظر انداز کرنے پر احمد حسین ڈیہڑ کا اعلا ن جنگ

  جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ،حقائق نظر انداز کرنے پر احمد حسین ڈیہڑ کا اعلا ن جنگ

  

ملتان(نیوز رپورٹر) سیکرٹریٹ کے قیام کا فیصلہ کرتے وقت تمام زمینی حقائق کونظر انداز کیا گیا،کوئی بولے نہ بولے میں خاموش نہیں بیٹھوں گا،پارٹی قیادت کو حقائق سے آگاہ کردیا،معاملے کو سنجیدگی سے نہ لیا گیا تو عوام معاف نہیں کریں گے،پارٹی کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا۔ان خیالات کا اظہارایم این اے ملک احمد حسین ڈیہڑ نے صحافیوں سے گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ بہاول میں سیکٹریٹ کے قیام کا فیصلہ شاہ محمود کی غلط پالیسی کے باعث ہوا جبکہ برا ملتان کے سب ایم این اے(بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

اور ایم پی اے برداشت کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ سیکرٹریٹ کے قیام کیلئے بنائی گئی کمیٹی میں اکثریت صوبہ محاذوالوں کی تھی،ان سب کا تعلق بہاول پور،رحیم یار خان اور ارد گرد سے تھا، اس لیے سب نے بہاول پور کی حمایت کی اور شاہ محمود کو بے بس کردیا،کمیٹی میں ملتان کے دیگر ممبران کو بھی شامل کیا جاتا تو یہ دن نہ دیکھنا پڑتا،شاہ محمود سرائیکی خطے کے عوام سے سچ نہیں بول رہے،ایڈیشنل چیف سیکرٹری واضح طو پر کہہ چکے کہ ملتان اور ڈیرہ غازی خان میں سب ا?فس بنیں گے۔سیکرٹریٹ کے قیام کے وقت زمینی حقائق کو نظر انداز کیا گیا، ملتان کی پانچ ہزار پرانی مرکزی حیثیت کو پس پشت ڈالا گیا،ملتان شہر کی موجودہ ا?بادی 22 لاکھ سے زائد ہے،جبکہ بہاول پور صرف7لاکھ ا?بادی کا شہر ہے،ملتان کو شہر کو موٹر ویز کے 4 انٹر چینج لگتے ہیں جبکہ بہاول پور60 کلو میٹر موٹر ویسے دور ہے،انٹرنیشنل ایئر پورٹ،میٹرو بس سروس،جنوبی پنجاب کی سب سے بڑی غلہ،لکڑ اور سبزی و فروٹ منڈیا ں بھی ملتان میں ہیں،سٹیٹ بینک،کسٹم ڈرائی پورٹ،جنوبی پنجاب کی سب بڑی انڈسٹریل سٹیٹ سب کو نظر انداز کر کے ناجانے کس کو خوش کرنے کی کوشش کی گئی۔ملتان میں سیکرٹریٹ کے قیام کیلئے جگہ بھی وافر موجود ہے،متی تل روڈ پر قائم جوڈیشل کمپلیکس کی تیار عمارت سیکرٹریٹ کیلئے انتہائی موذوں ہے،ایک روپے کا بھی خرچہ نہیں کرنا پڑے گا،وکلاموجودہ کچہری کی توسیع چاہتے ہیں انہیں بھی کوئی اعتزاض نہیں ہوگا۔انڈسٹریل سٹیٹ میں تیار عمارت موجود ہے جہاں کرونا کا مرکز بنایا گیا تھا،اس کو بھی استعمال کیا جاسکتا ہے،عمارت کا کوئی بہانہ نہیں مانتے۔سیکرٹریٹ ہر صورت ملتان میں بنایاجائے۔ملک احمد حسین ڈیہڑ نے کہا کہ سیکرٹریٹ اس طرح قیام کے فیصلے سے پی ٹی ا?ئی کو خطے میں ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا،وقت بتائے گا کہ یہ کتنا بڑا غلط فیصلہ تھا۔انہوں نے کہا کہ ہم حق کی بات کریں تو باغی کہا جاتا ہے،پارٹی قیادت کو چاہیے کہ اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے اورزمینی حقائق کے مطابق سیکرٹریٹ ملتان میں بنایا جائے۔

احمد حسین ڈیہڑ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -