ریلوے نے تو کہاتھا گالف کلب کیلئے بہت سی پارٹیاں تیار ہیں،لگتا ہے کلب کی لیز ہونے میں مزید10 سال اور لگیں گے ،جسٹس اعجاز الاحسن کے ریمارکس

ریلوے نے تو کہاتھا گالف کلب کیلئے بہت سی پارٹیاں تیار ہیں،لگتا ہے کلب کی لیز ...
ریلوے نے تو کہاتھا گالف کلب کیلئے بہت سی پارٹیاں تیار ہیں،لگتا ہے کلب کی لیز ہونے میں مزید10 سال اور لگیں گے ،جسٹس اعجاز الاحسن کے ریمارکس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ریلوے گالف فیصلے پر عملدرآمد کیس میں جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ ریلوے نے تو کہاتھا گالف کلب کیلئے بہت سی پارٹیاں تیار ہیں،لگتا ہے کلب کی لیز ہونے میں مزید10 سال اور لگیں گے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں ریلوے گالف فیصلے پر عملدرآمد کیس کی سماعت ہوئی،ریلوے گالف کلب کی فزیبلٹی اور کنسلٹنٹ کی رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کردی گئی۔

جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ رپورٹ آج ہی پیش ہونے کے باعث ہم اس کو فی الحال زیرغور نہیں لائیں گے ،وکیل ریلوے نے کہاکہ عدالتی حکم کے باوجود ایم ایچ وی ایل کی جانب سے آڈٹ میں تعاون نہیں کیاگیا ،وکیل ایم ایچ وی ایل نے کہاکہ اکاؤنٹس پہلے سے ہی ریلوے کے پاس ہیں۔

جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ ریلوے نے تو کہاتھا گالف کلب کیلئے بہت سی پارٹیاں تیار ہیں،لگتا ہے کلب کی لیز ہونے میں مزید10 سال اور لگیں گے ۔

وکیل ریلوے نے کہاکہ عدالت کی اجازت سے اب انٹرنیشنل ٹینڈرہوناہے،عدالت نے ایم ایچ وی ایل کمپنی کے نمائندے کو پیر کو ریلوے اور آڈٹ سے رابطے کی ہدایت کردی،عدالت نے ریلوے کی فزیبلٹی رپورٹ پر فریقین سے رائے طلب کرتے ہوئے سماعت 2 ہفتے تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -