علی رضا کے قتل کو فرقہ وارانہ تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں، ضیاء الحسن لنجار

  علی رضا کے قتل کو فرقہ وارانہ تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں، ضیاء الحسن لنجار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیرداخلہ سندھ ضیاء الحسن لنجار نے کہاہے کہ سی ٹی ڈی کے افسر  علی رضا کے قتل کو فرقہ وارانہ تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں۔میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے سندھ کے وزیرداخلہ ضیاالحسن لنجار نے کہا کہ یکم محرم کو علی رضا کا قتل ہوا ہے۔ اس واقعہ کو فرقہ وارانہ تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں۔علی رضا نے لیاری گینگ وار اور ٹی ٹی پی کے خلاف کارروائیاں کیں۔وہ کافی عرصے سے سی ٹی ڈی میں کام کررہے تھے۔ اس قتل میں جو بھی ملوث ہے وہ منطقی انجام تک پہنچے گا۔وزیر داخلہ نے کہاکہ پولیس کی قربانیوں کی وجہ سے کراچی کا امن و امان بہتر ہوا ہے۔ کراچی میں امن پولیس کی قربانیوں کا نتیجہ ہیاور کراچی کے عوام پولیس کے شانہ بشانہ ہیں۔ محرم میں خدشات ہوتے ہیں۔ سندھ میں امن و امان کے مسئلے پر علما سے میٹنگ ہوئی ہے۔ توقع ہے کہ یوم عاشور تک امن و امان کی صورتحال ٹھیک رہے گی۔ضیاالحسن لنجار نے کہا کہ کچے میں ڈاکوؤں کو ختم کیا جا رہا ہے۔ ڈاکو خود کو قانون کے سامنے پیش کریں۔تین ہندوں کو بازیاب کروایا جا رہا ہے۔ پریا کماری کے بارے میں جلد اچھی خبرآئے گی۔ تین سال پہلے کا کیس ہے مگرہمارے افسر اس پر کام کررہے ہیں۔