امدادی رقم پر ڈاکہ، متاثرہ خواتین کا احتجاج، روڈ بند

  امدادی رقم پر ڈاکہ، متاثرہ خواتین کا احتجاج، روڈ بند

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کوٹ سبزل، بٹہ کوٹ(نمائندہ پاکستان) تحصیل صادق آباد سے 35 کلومیٹر پکے کا دیہاتی علاقہ گورنمنٹ ہائی سکول چک نمبر 199پی، 30 کلومیٹر دور کوٹ سبزل اور صادق آباد سے تقریبا 55 کلومیٹر دور ماچھکہ سے بے نظیر انکم سپورٹ کا سینٹر صادق آباد میں قائم کیا گیا ہے۔ جہاں پر پکے کی غریب بینیفیشری اپنی رقم لے سکیں گے گورنمنٹ ہائی سکول199پی اور کوٹ سبزل ہائی سکول سینٹر کو بند کر کے تقریبا 10 ہزار بینیفیشری پر ظلم کیا جا رہا ہے جن میں کوٹ سبزل کے ملحقہ علاقوں ماچھکہ سمیت کے لوگ متاثر ہونگے۔ گورنمنٹ ہائی سکول 199 پی اور کوٹ سبزل ہائی سکو(بقیہ نمبر78صفحہ6پر)

ل سینٹر پر رقم کے حصول کے لیے آئی خواتین شدید گرمی میں ذلیل و خوار ہو رہی ہیں بینیفیشری کا کہنا ہے کہ ہمارے اس سینٹر 199پی اور کوٹ سبزل کو بحال کیا جائے ہمارے پاس کرایہ نہیں ہے اور نہ ہی کوئی سواری وغیرہ موجود ہے جس پر ہم مزید صادق آباد 35 کلومیٹر دور جا کر اپنی رقم لے سکیں۔ اور ہمیں 10 ہزار غریب بینیفیشری کو 35 کلومیٹر دور صادق آباد سینٹر پر رقم لینا سمجھ سے بالاتر ہے۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے اعلی افسران اور مقامی سیاستدانوں سے ہماری ہاتھ جوڑ کر اپیل ہے کہ سینٹر کوٹ سبزل اور چک نمبر 199پی کو فوری بحال کیا جائے۔بینظیر انکم سپورٹ پرو گرام کے تحت گورنمنٹ بوائز ہائی سکول گرانڈ میں قائم تقسیم مرکز میں انتظا میہ کے تضحیک آمیز ناروا سلوک کے خلاف سینٹر آئی سینکڑوں خواتین نے ہائی سکول کے سامنے احتجاج کرتے سڑک بلاک کر دی، اس دوران خواتین سینٹر انتظامیہ کے خلاف نعرہ با زی کرتی تہیں ِ، مظاہرین نے میڈیا کو بتایا کہ سینٹرکے دروازے دیر گئے تک بند رکھے جاتے ہیں، سینٹر میں کو ئی بیٹھنے نہ ہی پینے کے لئے کسی قسم کے انتظاما ت کئے گئے ہیں، کڑی دھوپ، حبس میں مستحق خواتین امدادکے حصو ل کے لئے انتظار کرنے پر مجبور ہیں۔