گرین ٹریکٹرسکیم کی ٹائم لائن مسلسل فالو کرنیکا حکم

گرین ٹریکٹرسکیم کی ٹائم لائن مسلسل فالو کرنیکا حکم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان(سٹی رپورٹر)وزیر زراعت و لائیو سٹاک پنجاب سید عاشق حسین گرمانی نے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب کے اقدامات سے صوبہ میں زرعی ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ وہ آج ایگریکلچر ہاس میں اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ اس موقع پر ٹرانسفارمنگ پنجاب ایگریکلچر پروگرام کی ٹائم لائنز کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کے دوران صوبائی وزیر زراعت پنجاب سید(بقیہ نمبر55صفحہ6پر)

 عاشق حسین کرمانی کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ اب تک 2 لاکھ 52 ہزار کاشتکاروں نے وزیر اعلی پنجاب کسان کارڈ کے لیے آن لائن درخواستیں جمع کروائی ہیں جن کی سکروٹنی کے بعد 94 ہزار سے زائد درخواستوں کو منظوری کے لیے بینک آف پنجاب بھیجا گیا ہے۔ اس کے علاوہ وزیر اعلی پنجاب سموگ کنٹرول پروگرام کے تحت کاشتکاروں کو فراہم کی جانے والی جدید مشینری(پاک سیڈر) تیاری کے مراحل میں ہے۔ بریفنگ کے دوران انہیں مزید بتایا گیا کہ اب تک سپرسیڈرز کے لیے 734 آرڈرز آچکے ہیں۔اس تعداد کو 1000 تک لے جانے کیلئے اقدامات کیے جا رہے ہیں ان سپرسیڈرز کی کوالٹی کو چیک کرنے کی ذمہ داری نسپاک کی ہے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر زراعت پنجاب سید عاشق حسین کرمانی نے واضح کیا کہ پاک سیڈرز کی تیاری کے دوران کوالٹی پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر زراعت نے کہا کہ زرعی ہیلپ لائن پر ہر ہفتہ وزیر اعلی پنجاب کے زرعی پروگرام سے متعلق جتنی کالز آرہی ہیں ان کا ڈیٹا مرتب کیا جائے تاکہ فارمرز کے تحفظات کو دور کیا جاسکے۔ صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ زرعی ہیلپ لائن پر روزانہ ایک ہزار کالز وزیر اعلی پنجاب کسان کارڈ اور دیگر اقدامات پر موصول ہورہی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فارمرز رجسٹریشن کے لیے جن کسانوں نے اپنا موبائل رجسٹر نہیں کرایا ہے اسکو فالو اپ کرنے کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر وزیر زراعت پنجاب سید عاشق حسین کرمانی نے گرین ٹریکٹرز اسکیم کی ٹائم لائن کو فالو کرنے کے بھی احکامات جاری کئے۔ ایک سوال کے جواب میں صوبائی وزیر زراعت و لائیو سٹاک پنجاب کو بتایا گیا کہ زرعی ٹیوب ویلز کی سولر سسٹم پر منتقلی میں 50فیصد حصہ کی رقم حکومت ادا کرے گی جبکہ بقایا 50 فیصد رقم کسان ادا کرئے گا۔ اجلاس کے دوران صوبائی وزیر نے تیلدار اجناس کے فروغ کیلئے ایک قابل عمل تجویز بنا کر پیش کرنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ سویابین کے فروغ کے لئے انڈسٹری کو لنک کرنا ضروری ہے۔اس ضمن میں بھرپور طریقے سے آگاہی مہم چلانے کے احکامات جاری کئے۔