ختم نبوت سینٹر لندن کے زیر اہتمام 38 ویں ختم نبوت کانفرنس ، کثیر تعداد میں لوگوں کی شرکت

ختم نبوت سینٹر لندن کے زیر اہتمام 38 ویں ختم نبوت کانفرنس ، کثیر تعداد میں ...
 ختم نبوت سینٹر لندن کے زیر اہتمام 38 ویں ختم نبوت کانفرنس ، کثیر تعداد میں لوگوں کی شرکت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن (مجتبیٰ علی شاہ ) ‎عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ ہمارے ایمان کا حصہ ہے اور آپ صلی اللہ علیہ و الہ و سلم کے بعد قیامت تک کوئی نبی پیدا نہیں ہو سکتا. ان خیالات کا اظہار علمائے کرام نے ختم نبوت سینٹر لندن کے زیر اہتمام 38 ویں ختم نبوت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔چیئرمین ختم نبوت سنٹر لندن طہٰ قریشی ممبر برٹش ایمپائر کی سرپرستی میں ہونے والی اس کانفرنس  کی صدارت علامہ ظفر اللہ شاہ  جبکہ مہمانان خصوصی مولانا  مولانا عبدالحمید اور قاری محمد یوسف تھے.  برطانیہ اور یورپ کے مختلف شہروں سے علماء کرام , مشائخ اور حضور پاک سے محبت کرنے والے لوگوں کی کثیر تعداد نے اس کانفرنس میں شرکت کی.   

‎ سالانہ ختم نبوت کانفرنس  میں برطانیہ اور یورپ کے مختلف شہروں سے علماء کرام ,مشائخ اور عاشقان رسول کی کثیر تعداد نے شرکت کی ختم نبوت سینٹر کے چیئرمین طہٰ قریشی ممبر برٹش ایمپائر کی سرپرستی میں ہونے والی اس کانفرنس  کے پہلے سیشن کی صدارت شیخ سلیمان غنی علامہ ظفر اللہ شاہ نے کی جبکہ مہمانان خصوصی بیلجیم سے آئے ممتاز عالم دین مولانا عبدالحمید اور قاری محمد یوسف تھے۔جبکہ دوسرے سیشن کی صدارت ممتاز الحق اور تیسرے سیشن کی صدارت البینین مسجد کے خطیب شیخ زمر اور آکسفورڈ مسجد کے خطیب شیخ رمزی نے کی ۔

کانفرنس کا آغاز سارم علی کی تلاوت کلام پاک سے ہوا جبکہ نشید ننھی بچیوں طوبہ اور فاطمہ نے پیش کی اس موقع پر ڈاکٹر نو شیروان نے ہدیہ نعت بھی پیش کیا۔‎کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ختم نبوت سینٹر لندن کے چیئرمین طہٰ قریشی ممبر برٹش ایمپائر نے کہا کہ برطانیہ میں ہمیں آزادی اظہار کا حق حاصل ہےجیسے اللہ تعالیٰ کو اپنے رب العالمین ہونے میں شریک پسند نہیں اسی طرح حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے خاتم النبیین ہونے میں بھی کوئی شریک پسند نہیں

‎علمائے اکرام جن میں مولانا عبدالحمید،شیخ سلیمان غنی،مولانا محمد یوسف علامہ سید ظفر اللہ شاہ ،شیخ رمزی ،شیخ زمر،مولانا عنائت اللہ،ڈاکٹر اشفاق احمد ،علامہ سردار خالد جاوید چشتی ،مولانا حافظ عمر ،ڈاکٹر محمد نو شیروان ،مفتی زائد یاسین، بیرسٹر بسم اللہ ،بیرسٹر محمد احمد اور‎مولانا دلاور حسین امام نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اللہ عزوجل نےحضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو بہت سے اعزازات سے نوازا جن میں سے ایک آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا آخری نبی ہونا بھی ہے۔ اب آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بعد ‎قیامت تک کوئی نبی پیدا نہیں آئے گااسی پر ہر مسلمان کا ایمان ہے۔

‎علماء کرام نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ عقیدۂ ختم نبوت کا تحفظ کرنا ہرمسلمان کا فرض منصبی ہے.اُمت مسلمہ کا چودہ سو سال سے متفقہ عقیدۂ ختم نبوت چلا آرہا ہے آج بھی پوری دنیا کے مسلمان عقیدۂ ختم نبوت پر متحد ومتفق ہیں۔‎علماء کرام کا مزید کہنا تھا  کہ  محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم اللہ کے آخری نبی ہیں۔  آج کے پر فتن دور میں جہاں دیکر فتنوں سے بچ کر اپنے مال و جان کی حفاظت ضروری ہے وہیں عقیدہ ختم نبوت پہ کار بند ہوکر حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کو آخری نبی مان کر اپنے ایمان کی ‎حفاظت کی اولین ضرورت ہے

کانفرنس کے آخر میں امت مسلمہ کے لئیے خصوصی دعا بھی کروائی گئی۔

مزید :

برطانیہ -