خاور مانیکا کے وکیل ساڑھے 11بجے نہیں آتے تو ریکارڈ دیکھ کر فیصلہ کر دونگا،جسٹس گل حسن اورنگزیب کے نظرثانی درخواست پر ریمارکس

خاور مانیکا کے وکیل ساڑھے 11بجے نہیں آتے تو ریکارڈ دیکھ کر فیصلہ کر ...
خاور مانیکا کے وکیل ساڑھے 11بجے نہیں آتے تو ریکارڈ دیکھ کر فیصلہ کر دونگا،جسٹس گل حسن اورنگزیب کے نظرثانی درخواست پر ریمارکس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ میں عدت کیس میں اپیل کا فیصلہ ایک ماہ میں کرنے کی ڈائریکشن پر نظرثانی کی درخواست پر جسٹس گل حسن اورنگزیب نے معاون وکیل کی سماعت میں وقفہ کی اپیل پر ساڑھے گیارہ بجے کیس دوبارہ ٹیک اپ کرینگے، رضوان عباسی آ گئے تو اُن کے دلائل سنیں گے، اگر خاور مانیکا کے وکیل نہیں آتے تو ریکارڈ دیکھ کر فیصلہ کر دونگا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں عدت کیس میں اپیل کا فیصلہ ایک ماہ میں کرنے کی ڈائریکشن پر نظرثانی کی درخواست پر سماعت  ہوئی،جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے خاور مانیکا کی درخواست پر سماعت کی، معاون وکیل نے کہا کہ سینئر وکیل رضوان عباسی سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، کیس میں کچھ دیر کا وقفہ کر دیں،بانی پی ٹی آئی کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے کہاکہ خاور مانیکا کے وکیل نے لکھا ہے کہ وہ زیارت کیلئے عراق ایران جانا چاہتے ہیں،انہوں نے لکھا ہے کہ زیارت کیلئے جانا ہے اس لیے ایک ماہ کی ڈائریکشن ختم کی جائے۔

جسٹس گل حسن اورنگزیب نے کہاکہ ساڑھے گیارہ بجے کیس دوبارہ ٹیک اپ کرینگے، رضوان عباسی آ گئے تو اُن کے دلائل سنیں گے، اگر خاور مانیکا کے وکیل نہیں آتے تو ریکارڈ دیکھ کر فیصلہ کر دونگا، وکیل سلمان اکرم راجہ نے کہاکہ آج 9 جولائی ہے 12 جولائی فیصلہ کرنے کی ڈیڈلائن ہے، عدالت نے کیس کی سماعت میں وقفہ کر دیا۔