میرا 1984ء میں سکھوں کیخلاف ہونیوالے دنگوں کاکوئی واسطہ نہیں‘امیتابھ بچن

میرا 1984ء میں سکھوں کیخلاف ہونیوالے دنگوں کاکوئی واسطہ نہیں‘امیتابھ بچن
میرا 1984ء میں سکھوں کیخلاف ہونیوالے دنگوں کاکوئی واسطہ نہیں‘امیتابھ بچن

  

ممبئی(این این آئی) بالی ووڈ سپر اسٹار امیتابھ بچن نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ 1984، دہلی میں سکھوں کے خلاف ہونے والے دنگوں سے ان کا کوئی واسطہ نہیں۔ٹائمز ناؤ کے ساتھ ایک نشست کے دوران امیتابھ نے کہا ’یہ محض بدنیتی پر مبنی ناقابل یقین جھوٹ ہیں۔میرا ان سے کوئی تعلق نہیں۔ان الزامات کا کوئی ثبوت نہیں۔ ان دنگوں میں جو کچھ ہوا وہ بہت تباہ کن تھا۔ ایسا دنیا کے کسی حصے میں نہیں ہونا چاہیے۔ لیکن یہ کہنا کہ میں ان کا ذمے دار ہوں، بہت مضحکہ خیز ہے اور میں عدالت میں لڑوں گا۔خیال رہے کہ امریکا کی ایک عدالت نے امیتابھ کو مبینہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے ایک مقدمہ میں طلب کر رکھا ہے۔

نیو یارک کے ’سکھ فار جسٹس‘ گروپ اور 1984 دنگوں کے دو مبینہ متاثرین کی جانب سے دائر اس مقدمہ میں لاس اینجلس میں ایک ڈسٹرکٹ کورٹ نے گزشتہ سال انڈین اداکار کو نوٹس جاری کیے تھے۔انٹرویو کے دوان بگ بی نے مختلف معاملات پر دل کی باتیں کہیں۔ جب بولی وڈ اسٹارسے پوچھا گیا کہ آیا وہ بوفورز سکینڈل کی وجہ سے کانگریس پارٹی سے الگ تو نہیں ہوئے؟ تو انھوں نے کہا ’نہیں۔جہاں تک میرا تعلق ہے، ایسا کچھ بھی نہیں۔

مزید :

کلچر -