طلبا کو کامیابیاں سمیٹنے کیلئے سنجیدگی سے پروفیشنل ریسرچ کو اپنانا چاہیے،صفدر محمود

طلبا کو کامیابیاں سمیٹنے کیلئے سنجیدگی سے پروفیشنل ریسرچ کو اپنانا ...

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) تحقیق سے نئے علم ایجاد ہوتے ہیں۔طالب علموں کو کامیابیاں سمیٹنے کے لئے سنجیدگی سے پروفیشنل ریسرچ کو اپنانا چاہیے۔ ان خیالات کا اظہار وی سی لاہور لیڈز یونیورسٹی ڈاکٹر صفدر محمود نے یونیورسٹی میں منعقدہ دوسری نیشنل ریسرچ ورکشاپ میں طلباء کی کثیر تعداد سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صدر لاہور لیڈز یونیورسٹی میاں ظہور وٹو نے کہا کہ پاکستان کو ترقی یافتہ ملکوں کے ہم پلہ بنانے کے لئے تحقیق کے میدان میں نئی نئی جہتوں کو متعارف کرانا چایئے تاکہ ملک کی ترقی میں حصہ ڈالا جا سکے۔ پرو وی سی ڈاکٹر منور سلطانہ مرزانے دوسری نیشنل ریسرچ ورکشاپ کے شرکاء سے کہا کہ جدید تحقیق کی مدد سے نئے نئے موضوعات پر ریسرچ مکالہ جات لکھنے چاہیں تاکہ ورلڈ کمیونٹی کو پاکستانیوں کی قابلیت کا ادراک ہو سکے۔ ورکشاپ سے ڈاکٹر رمضان لمز یونیورسٹی،ڈاکٹر ثروت فاطمہ جناح یونیورسٹی،ڈاکٹر شفیق الرحمان پنجاب یونیورسٹی ، ڈاکٹر محمود احمد اظہرصدر شعبہ انگریزی لیڈز سمیت سینئر اساتذہ ڈاکٹر اطہر ،ڈاکٹر اکبر خان ،لیاقت مسیح شمائلہ احمد، مبراہ خان،فراز محمود اور تنزیلہ خان نے بھی خطاب کیا۔ ورکشاپ میں لاہور اور دوسرے شہروں سے دس پبلک و پرائیویٹ یونیور سٹیوں سے طلباء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -