قومی اردو زبان تحریک کا حکومت سے دفعہ251کی خلاف ورزی کا نوٹس لینے کا مطالبہ

قومی اردو زبان تحریک کا حکومت سے دفعہ251کی خلاف ورزی کا نوٹس لینے کا مطالبہ

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)پاکستان قومی زبان تحریک نے وفاقی حکومت،وزیراعظم پاکستان، سپیکر قومی اسمبلی، چیئر مین سینٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ آئین کی دفعہ251کی مسلسل خلاف ورزی کا نوٹس لیں۔اور بانی پاکستان کے فرمان اور آئین پاکستان کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے اردو کو قومی زبان اور ذریعہ تعلیم بنانے کے سلسلے میں اپنی آئینی ذمہ داری پوری کریں۔قومی زبان تحریک کی مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر ڈاکٹر محمد شریف نظامی، پروفیسر محمد رضوان الحق،محمد ابوبکر, فیاض احمد (ایڈووکیٹ)،سید تاثیر مصطفے اور دوسرے راہنماؤں نے کہا کہ اردو کے ساتھ ساتھ علاقائی زبانوں کے فروغ کے بھی زبردست حامی ہیں۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ اردو کو دفتری زبان کو ذریعہ تعلیم بنانے کی جدوجہد جاری رکھی جائے گی۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پنجاب اور خیبر پختونخواہ میں پہلی سے دسویں جماعت تک انگریزی کو ذریعہ تعلیم بنانے کا فیصلہ کیا ہے جو آئین کی خلاف ورزی ہے ۔جسے حکومت فوری طور پر واپس لیا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -