برمی مسلمانوں پر ظلم کی انتہاکر دی گئی،علامہ مظہر عباس علوی

برمی مسلمانوں پر ظلم کی انتہاکر دی گئی،علامہ مظہر عباس علوی

  

لاہور( وقائع نگار) سابقہ صدر شیعہ علماء کونسل پنجاب علامہ مظہر عباس علوی نے کہاہے کہ برمی مسلمانوں پر ظلم و بربریت کی انتہاء کردی گئی، روہنگیا کے مظلوم مرد و خواتین اور کمسن بچوں کے قتل عام پر عالمی برادری و انسانی حقوق کے علمبرداروں کی زبانیں کیوں گونگ ہوگئی ہیں ،حقوق بشیریت کے دعویدار اس ظلم و بربریت پر کیوں خاموش تماشائی کا کردار بنے ہوئے ہیں؟روہنگیائی مظلوم فوری انصاف و مدد کیلئے بین الاقوامی برادری کے منتظر ہیں،عالمی اداروں کے بعد اسلامی ممالک کی خاموشی بھی انتہائی افسوسناک وحیران کن ہے ۔ انہوں نے کہاکہ انتہائی دکھ و کرب کی بات ہے کہ مسلمانوں کی ہزاروں بستیاں تاراج اور لاکھوں جھونپڑیاں نذر آتش کردی گئیں،آخری اطلاعات تک بیس ہزار سے زائد افراد اپنی قیمتی جانیں گنوا چکے ہیں۔

۔

، ما ل ملیشین نامی تنظیم نے 70 سے زائد مسلمان بستیو ں کو صفہ ہستی سے مٹادیا، ہزاروں زائد خواتین کو بے آبرو کیا گیا ، لاکھوں افراد نقل مکانی پر مجبور ہوگئے اور ہزاروں تاحال لاپتہ ہیں، 22مساجد شہید کردی گئیں لیکن اس سارے بھیانک کھیل پر عالمی برادری کہاں ہے؟ او آئی سی کہاں ہے ؟ا؟ کیا یہ عالمی انصاف کا دہرا معیار نہیں ؟۔ اس سارے قضیہ پر مسلم ممالک کے حکمران و عالمی ادارے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں، برما میں مسلمانوں کیساتھ اندوہناک مظالم کی بھیانک تصویری رخ ابھی تک مسلم دنیا پر صحیح طور پر عیاں نہیں ہوسکا۔برما میں انسانی حقوق کی تنظیموں اور صحافیوں کے جانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔برما کے مسلمان انصاف کے منتظر ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -