مسلمان مفکر ابن خلدون کی کتاب ’’مقدمہ‘‘ ضرور پڑھیں،مارک زکربرگ کا مداحوں کو مشورہ

مسلمان مفکر ابن خلدون کی کتاب ’’مقدمہ‘‘ ضرور پڑھیں،مارک زکربرگ کا مداحوں ...

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) فیس بک کے سی ای او مارک زکربرگ نے سال 2015ء کے آغاز میں اپنے مداحوں سے وعدہ کیا تھا کہ وہ ہر دو ہفتے میں کسی ایک بہترین کتاب کا مطالعہ کریں گے اور اس کے بارے میں سب کو بتایا بھی کریں گے۔ اگرچہ اب تک وہ کچھ بہترین کتابوں کا مطالعہ کرچکے ہیں لیکن جب انہوں نے چودہویں صدی عیسوی کے مسلمان مفکر ابن خلدون کی کتاب ’’مقدمہ‘‘ پڑھی تو واقعی حیران رہ گئے اور اپنے لاکھوں مداحوں سے کہا کہ کوئی اور کتاب پڑھیں یا نہ پڑھیں اس کتاب کو ضرور پڑھیں۔ابن خلدون، جنہیں مغربی مفکرین بھی عظیم ترین تاریخ دان اور سوشیالوجی کی جدید سائنس کا بانی قرار دیتے ہیں، نے یہ شاہکار تخلیق 1377ء میں کی، جب مغرب جہالت کی تاریکیوں میں ڈوبا ہواتھا۔ بیسویں صدی کے مشہور برطانوی مؤرخ آرنلڈ جے ٹوئن بی ابن خلدون اور ان کی تصنیف کو ان الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں:’’مقدمہ‘‘ تاریخ کا فلسفہ ہے، جو کہ بلا شبہ اپنی نوعیت کا عظیم ترین کام ہے جو کہ کسی بھی ذہن نے آج تک کسی بھی جگہ یا زمانے میں تخلیق کیا ہے۔مارک زکربرگ بھی اس کتاب سے شدید متاثر ہوئے ہیں، ان کا کہنا ہے، ’’یہ دنیا کی تاریخ ہے جسے ایک ایسے مفکر نے لکھا جو 1300 کی صدی میں اس دنیا میں تھا۔ یہ اس بات پر توجہ دیتی ہے کہ معاشرے اور کلچر کا بہاؤ کس طرح ہوتا ہے، بشمول شہروں، سیاست، تجارت اور سائنس کی تخلیق کے۔‘‘آپ نے دیکھا کہ مغرب کے عظیم دانشور اور قابل ترین لوگ ابن خلدون کو کس قدر خراج عقیدت پیش کر رہے ہیں؟ کاش کہ ہم مسلمان بھی اپنے اکابرین کے مقام و مرتبے سے اسی طرح آگاہ ہوتے، کاش کے ہم بھی ایک دوسرے کو نصیحت کرتے کہ ابن خلدون کی شاہکار تصنیف ’’مقدمہ‘‘ کا مطالعہ ضرور کریں۔

مزید :

علاقائی -