آئی ایم ایف کی شرائط پربننے والے بجٹ میں مراعات یافتہ طبقے کو نواز اگیا، احمد محمود

آئی ایم ایف کی شرائط پربننے والے بجٹ میں مراعات یافتہ طبقے کو نواز اگیا، ...

  

لاہور( نمائندہ خصوصی)پاکستان پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کے صدر و سابق گورنر پنجاب مخدوم سید احمد محمود نے پارٹی کی فیڈرل کونسل کے رکن عبدالقادر شاہین کے ہمراہ آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کی شرائط پر بجٹ پیش کیا گیا جس پر مراعات یافتہ طبقے کو نواز اگیا ہے غرباء کے لیے کسی قسم کے ریلیف کا اعلان نہیں کیا گیا بلکہ بجٹ میں صحت تعلیم اور زراعت کے شعبوں کو مکمل طور پر نظر انداز کر دیا گیا ۔ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں ساڑھے 7 فیصد اضافہ زیادتی اور سرکاری سیکرٹریوں کی تنخواہوں میں 100 فیصد اضافہ باعث تشویش ہے پیپلز پارٹی وفاقی حکومت کے موجودہ بجٹ کو مکمل طور پر مسترد کرتی ہے۔ میڈیا سیل کی طرف سے جاری بیان کے مطابق کہا گیا ہے کہ گزشتہ سال کی طرح موجودہ بجٹ بھی آئی ایم ایف کے قرضوں پر بنایا گیا ہے جو کہ مایوس کن اور مزدور کش ہے اس بجٹ میں ملک کی غریب اور پسی ہوئی عوام کے لیے کوئی ریلیف نہیں دیا گیا بلکہ عوام نے حکمرانوں سے جو امیدیں لگا رکھی تھی ان کا بھی خون کیا گیا ہے معاشی دھماکے کرنے کے دعویدار حکومت نے بجٹ میں عام اور غریب عوام کا ہی دھماکاکر دیا ہے حکومت اپنے تمام اہداف حاصل کرنے میں ناکا م ہو گئی ہے۔پارٹی رہنماؤں نے کہا کہ بجٹ میں بے روزگاری کے خاتمہ، غربت کے خاتمے چھوٹی صنعتوں کے فروغ اور بیمار صنعتوں کی بحالی کا کوئی منصوبہ نہیں اور نہ ہی ٹیکسوں میں کمی کی گئی ہے بلکہ نئے ٹیکسوں کا اضافہ کیا گیا ہے نہ ہی ٹیکسوں کا دائرہ کار بڑھایا گیا ہے اور نہ ٹیکسوں کی وصولی کے نظام کو موثر بنایا گیا ہے جو لوگ ٹیکس دیتے ہیں انہی پر مزید بوجھ بڑھایا گیا ہے ۔

احمد محمود

مزید :

صفحہ آخر -