متحدہ تنظیموں کے نمائندوں کامزدور کی کم از کم اجرت 20ہزار مقرر کر نے کا مطا لبہ

متحدہ تنظیموں کے نمائندوں کامزدور کی کم از کم اجرت 20ہزار مقرر کر نے کا مطا ...

  

لاہور (خبر نگار) پاکستان بھر کے محنت کشوں کی متحدہ تنظیموں کے نمائندوں نے کہا ہے کہ مزدور کی کم سے کم اجرت 20ہزار مقرر کی جائے۔ پنشن میں کم سے کم 50فیصد اضافہ کیا جائے اور آئی ایم ایف کے دباؤ پر قومی اداروں کی نجکاری کا سلسلہ بند کیا جائے وگرنہ ملک گیر احتجاجی تحریک شروع کر دی جائے گی ان خیالات کا اظہار آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کے زیر اہتما م معقدہ قومی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مزدور رہنما خورشید احمد اور دیگر نے اپنے اپنے خطات میں کیا ہے۔ جس میں واپڈا و محکمہ بجلی، ریلوے، پی ٹی سی ایل، آئل اینڈگیس، پی آئی اے کی ٹریڈیونین نمائندگان کے علاوہ سینٹ آف پاکستان اور انسانی حقوق کمیشن آف پاکستان اور سول سوسائٹی کے نمائندگان نے کثیر تعداد میں شرکت کی اس موقعہ پر بزرگ مزدور راہنماء خورشیداحمد مرکزی جنرل سیکرٹری کنفیڈریشن نے تمام مندوبین کا خیرمقدم کرتے ہوئے اعلان کیا کہ حکومت کی قومی مفاد عامہ کے اداروں کی آئی ایم ایف کے دباؤ پر مجوزہ نجکاری قومی مفاد کے خلاف ہے اسی وجہ سے آئین پاکستان کی آرٹیکل 3 اور 9 میں تحریر ہے کہ یہ ریاست کی بنیادی ذمہ داری ہے کہ وہ شہریوں کو بجلی، تعلیم، صحت، گیس، کمیونیکیشن کی بنیادی سہولتیں مہیا کرے، بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح نے قومی اداروں کو عوامی مفاد کے لئے سرکاری شعبے میں رکھنے کا اعلان فرمایا تھا اس موقعہ پر روبینہ جمیل صدر کنفیڈریشن ہذا نے وزیراعظم پاکستان سے پْرزور مطالبہ کیا کہ وہ قومی اداروں بجلی، ریلوے، پی آئی اے، آئل اینڈگیس، سول ایویشن، نیشنل بینک آف پاکستان میں سیاسی مداخلت ختم کرکے اْن کی بہتر کارکردگی کے انتظامی اصلاحات کا نفاذ کرے اجلاس میں رکن سینٹ آف پاکستان نے کارکنوں کو یقین دلایا کہ اْن کی سیاسی جماعت پیپلز پارٹی قومی اداروں کی مجوزہ نجکاری کے خلاف محنت کشوں کی کنفیڈریشن ہذا کے زیراہتما م جدوجہد کی پْرزور حمایت کرتی ہے اجلا س میں عبدالطیف نظامانی صد ر سندھ ر، حاجی رمضان اچکزئی صدر بلوچستان،گوہر تاج صدر خیبرپختونخواہ کنفیڈریشن ہذا اور اکرم بندہ جنرل سیکرٹری اسلام آباد ریجن، چوہدری محمد انور صدر ریلوے ورکرز یونین، جاوید بلوچ چیئرمین آل پاکستان واپڈا ہائیڈروالیکٹرک ورکرز یونین سی بی اے اسلام آباد ریجن، اکبر علی خان صدر نیشنل بینک آف پاکستان ایمپلائز یونین، اْسامہ طارق سیکرٹری آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن ودیگر نمائندگان کارکنان اور انسانی حقوق کمیشن آف پاکستان اور عوامی ورکرز پارٹی کے نمائندگان جواد احمد مشہور گلوکار اور نفیسہ رکن سینٹ آف پاکستان نے بھی خطاب کرتے ہوئے محنت کشو ں کی کنفیڈریشن ہذا کے زیراہتمام جدوجہد کی بھرپور حمایت کی اس موقعہ پر ایک قرار داد کے ذریعے وزیراعظم پاکستان سے قومی مفاد عامہ کے عوامی مفاد میں مجوزہ نجکاری روکنے اور آئندہ بجٹ میں ملازمین وکارکنوں کی تنخواہوں و بڑھاپے کی پنشن کم ازکم پچاس فیصداور اْجرت کم ازکم مبلغ 20 ہزار روپے ماہوار مقر ر کی جائے اور ملک میں جاگیرداری و سرمایہ داری کے فرسودہ نظام ختم کرکے ملک میں نوجوانوں کی عام بے روزگاری و مہنگائی اور غربت میں روز افزوں اضافہ اور بچوں کی مشقت وجبری محنت اور خواتین کے ساتھ امتیازی سلوک کی لعنتوں کو جلدختم کرنے کا مطالبہ کیا اور صحافیوں کے ورکنگ ویج بورڈ ایوارڈ پرجلد عمل کرایاجائے اس کانفرنس میں حکومت کو واضح کیاگیا کہ اگر اس نے محنت کشوں کے جائز موقف سن کر اس کا منصفانہ حل نہ کیا تو محنت کش ملک بھر میں احتجاجی تحریک چلائیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -