آصف زرداری کانریندرمودی کے غیرضروری تبصرے پر مایوسی کا اظہار

آصف زرداری کانریندرمودی کے غیرضروری تبصرے پر مایوسی کا اظہار

  

اسلام آباد(خصوصی رپورٹ)پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین سابق صدر آصف علی زرداری نے بھارتی وزیراعظم نرنیدر مودی کی جانب سے بنگلہ دیش میں 1971 کے واقعات پر تبصرہ جس میں ایک مرتبہ پھر پاکستان پر دہشتگردی کی پشت پناہی کرنے کا الزام لگایا ہے، پر نہایت مایوسی کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم کی جانب سے یہ غیرضروری تبصرہ پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر کرنے میں معاون نہیں ہوگا جبکہ پاکستان اور بھارت کی حکومتیں اور دونوں ممالک کے ایک ارب سے زیادہ عوام امن اور اچھے تعلقات کے خواہاں ہیں۔ دہشتگردی علاقے کے عوام کی مشترکہ دشمن ہے اور اس سے لڑنے کے لئے دونوں ممالک کو ایک دوسرے کے ہاتھ میں ہاتھ ڈال کر ایک ساتھ کام کرنا چاہئے۔ ایک دوسرے کو الزام دینے سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ سابق صدر نے کہا کہ 1971 کے واقعات ہماری تاریخ ایک تلخ باب ہے اور اس کے بارے ہر شخص اور ہر علاقے کا اپنا تناظر ہے۔ پرانے زخموں کو کریدنے کا کوئی مقصد نہیں اور صرف ایک تناظر کو تسلیم کرنا اور دوسرے تناظر کو مسترد کرنا درست نہیں۔ دریں اثناء پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین سابق صدر آصف علی زرداری نے سینئر صحافی طارق چوہدری کی والدہ کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ اپنے تعزیتی پیغام میں سابق صدر نے کہا کہ انہیں طارق چوہدری کی والدہ کی رحلت کی خبر سن کر انتہائی دکھ اور صدمہ پہنچا۔ کسی قریبی عزیز اور خاص طور پر والدہ کی وفات پورے خاندان کے لئے عظیم صدمہ ہوتی ہے۔ انہوں نے مرحومہ کی روح کے ایصالِ ثواب اور لواحقین کے لئے صبر جمیل کی دعا بھی کی۔

مزید :

صفحہ اول -