پوسٹ بجٹ بریفنگ، رپورٹر کا انتہائی ناشائاستہ لفظ سن کر اسحاق ڈار غصے میں آئے تھے، سٹاف کا موقف

پوسٹ بجٹ بریفنگ، رپورٹر کا انتہائی ناشائاستہ لفظ سن کر اسحاق ڈار غصے میں آئے ...
پوسٹ بجٹ بریفنگ، رپورٹر کا انتہائی ناشائاستہ لفظ سن کر اسحاق ڈار غصے میں آئے تھے، سٹاف کا موقف

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی طرف سے اپنی پریس بریفنگ میں ایک رپورٹر کو باہر نکالنے کے مسئلے پر ابھی تک بحث جاری ہے۔ اسحاق ڈار کے عملے کے لوگوں نے اس کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ متعلقہ رپورٹر نے اپنے سوال کا جواب نہ ملنے اور صرف یہ کہنے پر کہ آپ مجھے بات تو مکمل کرنے دیں۔ ایک نہایت ناشائستہ اور غیر پارلیمانی لفظ کہا جس پر اسحاق ڈار غصے میں آگئے اور انہوں نے کہا کہ اسے باہر بھیجیں۔

انہوں نے کہا کہ ڈار صاحب کو جو لفظ کہا گیا اسے بیان نہیں کیا جاسکتا تاہم وہ انتہائی قابل قابل اعتراض تھا اور ڈار صاحب نے اس لئے سن لیا کہ وہ صحافی قریب ہی بیٹھا تھا۔ اسحاق ڈار کے قریبی لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ ہزاروں بار پریس سے گفتگو کرچکے ہیں اور ان کا اندازہ بہت مفاہمانہ ہوتا ہے اور وہ سخت سے سخت سوال کا خندہ پیشانی سے جواب دیتے ہیں لیکن وہ ناشائستہ اور غیر پارلیمانی لفظ کو دوبارہ ادا کرنے سے گریز کررہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار صاحب برسوں سے قومی سیاست میں ہیں اور کبھی ایسا واقعہ پیش نہیں آیا۔ اس اخبار نویس کو باقاعدہ تیاری کے ساتھ بھیجا گیا تھا کہ وہ ناشائستہ لفظ کہے اور ڈار صاحب سے لڑائی جھگڑا ہو جس سے گریز کرتے ہوئے انہوں نے صرف یہ کہا کہ اسے باہر بھیج دو۔

مزید :

اسلام آباد -