شادی کے خواہشمند چینی شہری نے دلہن کی تلاش میں 11 کروڑ اڑا دیئے،پھر بھی کامیابی نہ ملی تو کیا کیا،جان کر آپ کو بھی حیرت ہو گی

شادی کے خواہشمند چینی شہری نے دلہن کی تلاش میں 11 کروڑ اڑا دیئے،پھر بھی ...
شادی کے خواہشمند چینی شہری نے دلہن کی تلاش میں 11 کروڑ اڑا دیئے،پھر بھی کامیابی نہ ملی تو کیا کیا،جان کر آپ کو بھی حیرت ہو گی

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) شادی کے لیے ”پرفیکٹ میچ“ کی تلاش تو سبھی کرتے ہیں اور اس مقصد کے لیے اچھی خاصی رقوم بھی خرچ کی جاتی ہیں لیکن جتنی رقم اس چینی شخص نے ”اچھی“ بیوی کی تلاش پر خرچ کر دی شایدلوگ عمر بھر بیوی کی فرمائشوں پر نہ خرچ کرتے ہوں، اس پر مستزاد یہ کہ ”اچھی“ بیوی اسے پھر بھی نہ مل سکی اور اسے رقم واپس لینے کے لیے عدالت سے رجوع کرنا پڑا۔ژینگ نامی 40سالہ امیر بزنس مین نے ایک فرم کو خوبصورت اور سگھڑ بیوی تلاش کرنے کے لیے 11کروڑ52لاکھ88ہزار روپے ادا کیے۔

مزیدپڑھیں:’گھورتی رہتی ہے ‘چینی شہری نے مشہور اداکارہ کیخلاف مقدمہ کیوں درج کروایا؟جان کرآپ ہنسی روک نہ پائیں گے

ژینگ نے بیوی کے لیے جو شرائط رکھیں وہ یہ تھیں کہ لڑکی کی عمر 20سے 28سال کے درمیان اور اس کا قد 5فٹ 8انچ تک ہو اور وہ بلا کی خوبصورت بھی ہو۔ فرم نے 8لڑکیوں کی اس سے ملاقات کروائی لیکن کوئی بھی اس کے معیار پر پوری نہ اتر سکی۔ فرم نے ژینگ کی ان لڑکیوں سے ملاقات کروانے کے لیے تقاریب منعقد کیں، ژینگ کی طرف سے مقرر کیے گئے میرج کونسلرز اور ماہرین نفسیات نے لڑکیوں کے انٹرویو کیے اور انہیں ژینگ کے لیے ناموزوں قرار دے دیا جس پر ژینگ نے فرم کے خلاف مقدمہ درج کر دیا۔ عدالت نے سماعت کے بعد فرم کو حکم دیا کہ وہ ژینگ کو 6کروڑ54لاکھ 34ہزار روپے بطور ری فنڈ واپس کرے۔واضح رہے کہ ژینگ نے 2009ءمیں فرم کو اپنی دلہن ڈھونڈنے کی ذمہ داری سونپی تھی اور اس کے عوض انہیں سالانہ بھاری رقم ادا کرتا تھا لیکن فرم 7سالوں میں اسے محض 8لڑکیاں دکھانے میں ہی کامیاب ہو سکی۔

 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -