نریندر مودی کاتازہ بیان بین الاقوامی سطح پر اٹھایا جائے:صدرالدین ہاشوانی

نریندر مودی کاتازہ بیان بین الاقوامی سطح پر اٹھایا جائے:صدرالدین ہاشوانی
 نریندر مودی کاتازہ بیان بین الاقوامی سطح پر اٹھایا جائے:صدرالدین ہاشوانی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ  ڈیسک  ) معروف پاکستانی کاروباری شخصیت اور ہاشو گروپ کے چئیرمین صدرالدین ہاشوانی نے کہا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی تازہ بیان  سے ثابت ہوگیا ہے کہ وہ مسلمانوں کا بدترین دشمن ہے اور کل کی طرح آج بھی مسلمانوں کو آپس میں لڑا کر انکے خون سے ہاتھ رنگنے کی سازشیں کر رہا ہے۔

مودی کے حالیہ بیان کو بین الاقوامی سطح پر اٹھایا جانا چاہیے۔ منگل کے روز جاری کئے گئے اپنے تازہ بیان میں صدرالدین ہاشوانی نے انکشاف کیا کہ مشرقی پاکستان کو ہم سے جدا کرنے کی سازش کے تین مرکزی کردار مجیب الرحمٰن ، اندراگاندھی اور ذوالفقار علی بھٹو تھے جنہوں نے ملکر چھ نکات تیار کئے تھے اور ان کے بارے میں مجھے بخوبی علم ہے کہ وہ کیا تھے۔اور آج پھر مجیب کی بیٹی سازشی انتہا پسند ہندو کی ہمنوا بن گئی ہے۔انہوں نے زور دے کر کہا کہ دنیا بھر میں مسلمانوں کو مودی کی گندی ذہنیت کے خلاف یکجا ہوکر صف آراءہو جانا چاہیے تاکہ انسانیت کے لئے محبت اور بھائی چارے کا پیغام دینے والے اپنے پیارے دین اسلام کا تحفظ کیا جا سکے۔ کیونکہ اسلام وہ دین ہے جوایک انسان کے قتل کو پوری انسانیت کا قتل قرار دیتا ہے۔

صدر الدین ہاشوانی کا کہنا تھا کہ مودی کے ہاتھ بھارت میں مسلمانوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں یہ وہی انسان نما درندہ ہے جس نے گجرات میں مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلنے کے بعد مٹھائی بانٹی تھی اور آج بھی وہ پاگل ذہنیت کے ساتھ بھارت میں مسلمانوں کی زندگیاں اجیرن بنارہا ہے۔انہوں نے تجویز دی کہ مودی کے تازہ بیان کو مسلم ممالک مشترکہ طور پر اقوام متحدہ اور دیگر فورمز میں لے جائیں جہاں وہ اس مسلم دشمن بھیڑئے کے خلاف بطور گواہ پیش ہونے کے لئے تیار ہیں۔ صدرالدین ہاشوانی نے بھارتی مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم ، مذہبی تفریق، تعلیم اور ملازمتوں دور رکھنے کی ہندو انتہاپسند بھارتی حکومت کی جاری پالیسیوں پر گہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں تمام مسلمانوں کو انکے خلاف متحد ہو کر مقابلہ کرنا چاہیے ورنہ سازشی عناصر انہیں تقسیم کرکے انکے خون سے ہاتھ رنگتے رہیں گے۔

مزید :

قومی -