’میں چاہتی ہوں کہ تم میری شادی پر تصاویر کھینچو لیکن ساتھ ہی یہ بھی بتاﺅ کہ اگر ہماری طلاق ہوگئی تو پھر کیا تم۔۔۔‘ دلہن کی فوٹوگرافر سے ایسی درخواست کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپاہوگیا، ایسی بات کبھی کسی دلہن نے اپنی شادی کے بارے میں کبھی نہ کہی ہوگی

’میں چاہتی ہوں کہ تم میری شادی پر تصاویر کھینچو لیکن ساتھ ہی یہ بھی بتاﺅ کہ ...
’میں چاہتی ہوں کہ تم میری شادی پر تصاویر کھینچو لیکن ساتھ ہی یہ بھی بتاﺅ کہ اگر ہماری طلاق ہوگئی تو پھر کیا تم۔۔۔‘ دلہن کی فوٹوگرافر سے ایسی درخواست کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپاہوگیا، ایسی بات کبھی کسی دلہن نے اپنی شادی کے بارے میں کبھی نہ کہی ہوگی

  


لندن (نیوز ڈیسک) شادی کے وقت طلاق کا خیال بھی ذہن میں آئے تو اسے انتہا درجے کی بدشگونی سمجھا جاتا ہے لیکن ایک دور اندیش برطانوی خاتون نے نہ صرف اس تلخ امکان پر غور کیا بلکہ فوٹوگرافر سے یہ بھی پوچھ لیا کہ اگر طلاق ہوگئی تو کیا وہ وصول کی گئی فیس واپس کردے گا۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق یہ حیرت انگیز واقعہ سوشل میڈیا ویب سائٹ ریڈٹ پر پوسٹ کی گئی ایک ای میل کے زریعے سامنے آیا ہے۔ یہ ای میل ایک خاتون کی جانب سے ایک فوٹوگرافر کو بھیجی گئی، جس میں خاتون نے فوٹوگرافر سے کہا ہے کہ وہ شادی کے موقع پر تصاویر بنانے کی بھاری فیس ضرور وصو کرلے لیکن اگر ان کی طلاق ہوگئی تو وہ ساری فیس ری فنڈ کردے۔ وہ فوٹو گرافر سے کھل کر بات کرتے ہوئے کہتی ہے ”ہم آپ سے ایک معاہدہ کرناچاہ رہے ہیں کہ اگر ہماری طلاق ہوگئی تو آپ وصول کی گئی فیس ہمیں واپس کردیں گے۔ کیا آپ کے معاہدے میں یہ شق پہلے سے شامل ہوتی ہے یا ہمیں یہ شق اضافی طور پر شامل کرنا ہوگی؟“

’کئی سالوں کی محبت کے بعد ہم نے شادی کرنے کا فیصلہ کیا، بالآخر وہ دن آپہنچا، شادی کی تقریب جاری تھی کہ ایک دم میرے شوہر کا بہترین دوست کھڑا ہوا اور کہنے لگا کہ۔۔۔‘

یہ تو واضح نہیں کہ فوٹوگرافر نے خاتون کے ساتھ یہ عجیب و غریب معاہدہ کرلیا یا نہیں البتہ سوشل میڈیا صارفین نے اس بات پر بے حد حیرت کا اظہار کیا ہے۔ اکثر لوگوں نے خاتون کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ اسے اپنے ازدواجی تعلق کے بارے میں پرامید رہنا چاہیے اور شادی کی تیاری کرنی چاہئیے نا کہ طلاق کی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس