برطانیہ میں پارلیمانی انتخابات کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ، کنزرویٹو پارٹی نے سبقت حاصل کر لی

برطانیہ میں پارلیمانی انتخابات کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ، کنزرویٹو پارٹی نے ...
برطانیہ میں پارلیمانی انتخابات کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ، کنزرویٹو پارٹی نے سبقت حاصل کر لی

  


 لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) برطانیہ میں پارلیمانی انتخابات میں پولنگ کے بعد ووٹوں کی گنتی کا عمل جاری ہے جس میں اب تک کے نتائج کے مطابق کنزرویٹو پارٹی314 سیٹیں لیکر پہلے جبکہ لیبرپارٹی 261 نشستوں پر کامیابی حاصل کر کے دوسرے نمبر پر ہے۔حکومت بنانے کیلئے کنزرویٹو کو 326سیٹیں درکار ہیں۔برطانوی پارلیمان کی 650سیٹوں پر تین ہزار  امیدوار مد مقابل ہیں۔پاکستانی نژاد برطانوی امیدواروں نے انتخابات میں ہلچل مچا دی۔سکاٹش نیشنل پارٹی نے لیبر پارٹی کی حمایت کا اعلان کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی پارلیمان جسے دارالعوام کہا جاتا ہے، کی 650 نشستوں کے لیے پولنگ برطانوی وقت کے مطابق صبح 7 بجے شروع ہوئی جو رات 10 بجے تک جاری رہی۔پولنگ کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ہے اور اب تک650 میں سے 645حلقوں سے موصول ہونے والے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق کنزرویٹو پارٹی نے314نشستیں حاصل کر رکھی ہیں جبکہ لیبر پارٹی کے پاس261نشستیں ہیں ، سکاٹش نیشنل پارٹی کو 35نشستوں پر کامیابی ملی ہے ۔لبرل ڈیموکریٹس کے پاس 12سیٹیں ہیں جبکہ ڈیموکریٹک یونسنسٹ پارٹی کو بھی 12شستوں پر کامیابی ملی ہے۔اس کے علاوہ آزاد امیدوار گیارہ نشستوذں پر کامیاب رہے۔سابق نائب وزیر اعظم بھی ہار گئے ۔

اس کے علاوہ لیبر پارٹی کےپاکستانی نژاد عمران حسین بریڈ فورڈ سے کامیاب ہوگئے ۔  اسی پارٹی کی پاکستانی نژاد رکن شانہ برمنگھم سے کامیاب ہو ئیں،لیبر پارٹی کی پاکستانی نژاد یاسمین قریشی نے بولٹن میں میدان مار لیا ۔ناز شاہ بریڈ فورڈ ،افضل خان مانچسٹر سے کامیاب قرار پائے۔پولنگ کا عمل تقریبا 15 گھنٹے تک جاری رہا جس کے دوران صبح کے وقت پولنگ سٹیشنز پر لوگوں کا رش کم رہا تاہم شام میں اس میں اضافہ دیکھا گیا، بعض علاقوں میں بارش کی وجہ سے ووٹرز کو پریشانی کا سامنا رہا مگر برطانیہ میں رہائش پذیر پاکستانی کمیونٹی نے ووٹنگ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔

مزید : برطانیہ