پراسیکیوٹرز بھرتیاں،خواتین کو 15فیصد کوٹہ نہ دینے پرحکومت سے جواب طلب

پراسیکیوٹرز بھرتیاں،خواتین کو 15فیصد کوٹہ نہ دینے پرحکومت سے جواب طلب
پراسیکیوٹرز بھرتیاں،خواتین کو 15فیصد کوٹہ نہ دینے پرحکومت سے جواب طلب

  


لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پراسیکیوٹرز بھرتیوں میں خواتین کا 15فیصد کوٹہ نہ دینے پر سیکرٹری پراسیکیوشن اور سیکرٹری ایس اینڈ جی اے ڈی سے 14جون تک جواب طلب کرلیاہے۔

آﺅٹ آف ٹرن بھرتیاں کیس ،کسی کا ڈر نہیں، ہر قیمت پر میرٹ کی بالادستی کو یقینی بنایا جائے گا،چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ

چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے عنا بتول سمیت دیگر کی درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزار کے وکیل مشتاق موہل نے موقف اختیارکیاکہ حکومت نے پراسیکیوٹرز بھرتیوں میں خواتین کو 15فیصد کوٹہ دینے کی یقین دہانی کرائی، ہائیکورٹ نے یقین دہانی کی بنیاد پر خواتین کو کوٹہ دینے کا فیصلہ سنایاتھا، خواتین کو کوٹہ دینے کی بجائے حکومت نے فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا ہے ، حکومت کا سپریم کورٹ میں فیصلہ چیلنج کرنا بدنیتی ظاہر کرتا ہے، عدالت حکومت کو پراسیکیوٹرز بھرتیوں میں خواتین کو 15 فیصد کوٹہ دینے کا حکم دے، چیف جسٹس نے خواتین کو کوٹہ دینے کی یقین دہانی سے مکرنے پر حکومت پر برہمی کا اظہار کیا، عدالت نے سیکرٹری پراسیکیوشن اور سیکرٹری ایس اینڈ جی اے ڈی سے 14جون تک جواب طلب کرلیاہے۔

مزید : لاہور