کلرسیداں،1سال قبل اغواء ہونیوالی ٹیچرلاہورسے بازیاب ،عدالت پیش

کلرسیداں،1سال قبل اغواء ہونیوالی ٹیچرلاہورسے بازیاب ،عدالت پیش

کلر سیداں(تحصیل رپورٹر) تھانہ کلر سیداں پولیس نے سب انسپکٹر اسلم شہزاد نے ایک برس قبل اغواء ہونے والے سکول ٹیچر کو لاہور سے بازیاب کروا کر عدالت پیش کر دیا جہاں 28 سالہ ف) نے 164 کے تحت اپنے بیان قلم بند کرواتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ میں عاقل و بالغ ہوں اور بغیر کسی دباؤ کے میں نے ثالث نامی شخص سے اپنی مرضی سے شادی کر لی ہے ،مجھے کسی نے اغواء نہیں کیا اور تھانہ کلر سیداں میں میرے حوالے سے درج اغواء کے مقدمہ میں کوئی صداقت نہیں۔معزز عدالت نے علیحدگی میں والدین اور بیٹی کی ایک گھنٹہ ملاقات بھی کروائی جو بے نتیجہ رہی جس کے بعد عدالت نے پولیس کو بحفاظت لڑکی کو اس کے خاوند کے گھر پہنچانے کی ہدایت جاری کر دی۔کلر سیداں کے نواحی علاقہ چنام کی 28 سالہ(ف) نامی سکول ٹیچر اپنے والد کے ہمراہ راولپنڈی سے لاہور اپنے ننھیال جایا کرتی تھی جہاں سفر کے دوران بس ڈرائیور کے ساتھ اس کی دوستی ہو گئی جو بعد ازاں محبت میں بدل گئی اور پھر طے شدہ پروگرام کے تحت وہ ایک دن گھر چھوڑ کر اپنے محبوب کے پاس جا پہنچی اور پھر دونوں نے کورٹ میرج کر لی ۔پولیس کے مطابق ثالث نامی بس ڈرائیور نہ صرف پہلے سے شادی شدہ ہے بلکہ دو بیٹیوں اور ایک بیٹے کا باپ بھی ہے اور نائن سی کے ایک مقدمہ میں آج کل جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہے جبکہ اس کی نئی نویلی دلہن اس کے ایک رشتہ دار کے ہاں رہائش پذیر ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...