عطائی کے انجکشن سے جاں بحق ہونیوالی خاتون کے شوہر پر قتل کا الزام

عطائی کے انجکشن سے جاں بحق ہونیوالی خاتون کے شوہر پر قتل کا الزام

اڈا پل 14 )نامہ نگار(غریب آباد کے رہائشی وسیم کی اہلیہ راحیلہ کی صبح کے وقت بلڈ پریشر کی دوائی لینے کیلئے قریبی عطائی ڈاکٹرکے کلینک پر پہنچی تو ڈاکٹر نے مبینہ طور پر بغیر ناشتہ کئے ہی مریضہ کو انجکشن اور دوائی دے دی‘ اس کے بعد راحیلہ کی دماغ کی شریان پھٹ گئی جسے قریبی تحصیل ہیڈ کواٹر (بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

ہسپتال جہانیاں لے جایا گیا تو شریان پھٹنے کی تصدیق ڈاکٹروں نے بھی کی۔ راحیلہ کی موت کا سنتے ہی راحیلہ کا بھائی محمد خان ولد ریاض احمد نے تھانہ جہانیاں میں اپنے بہنوئی کے خلاف درخواست گزار کردی کہ میرا بہنوئی وسیم دوسری شادی کا خواہشمند تھا اور میری بہن کو مارتا پیٹتا رہتا تھا اور اس نے میری بہن کا بلڈ پریشر اگر تیز ہوا ہے تو اس کی ٹینشن کی وجہ سے ہی ہوا ہے اور یہ میری بہن راحیلہ کا قاتل ہے۔ پولیس نے وسیم کو اہلیہ کے قتل کے جرم میں گرفتارکر کے حوالات میں بند کردیا بعد ازاں راحیلہ کے عزیز و رشتہ داروں نے جمع ہو کر تھانہ جہانیا ں میں رونا دھونا شروع کردیا اور کہا کہ ہمیں انصاف مہیا کیا جائے ‘وسیم کے خلاف کارروائی کی جائے مگر قائم مقام ایس ایچ او بابا نور شاہ نے مدعی پارٹی کو کہا کہ میرٹ کے مطابق تفتیش کی جا رہی ہے‘ پورسٹ مارٹم کے بعد ہی صورتحال سامنے آئے گی اور قصور واروں کے خلا ف قانونی کارروائی کی جائے گی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر