حکومت نے معذور افراد کو انصاف کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا

حکومت نے معذور افراد کو انصاف کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا
حکومت نے معذور افراد کو انصاف کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی سماجی بہبود ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ حکومت نے احساس پروگرام کے تحت تمام معذور افراد کو انصاف کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ انصاف کارڈ سے تمام معذور افراد کا مفت علاج کیا جائے گا، ویل چیئر بھی انصاف کارڈ کے تحت مفت فراہم کی جائے گی۔

پریس کانفرنس سے خطاب میں ثانیہ نشتر نے کہا کہ تمام سرکاری ہسپتالوں کو معذوروں کی رجسٹریشن کے احکامات دے دیے ہیں،وزیر اعظم نے معذور افراد کے لیے نیا پاکستان ہاوسنگ سیکم میں 2 فیصد کوٹہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ معذور افراد کو انصاف کارڈ جبکہ غریبوں کو راشن کارڈ ملے گا،غربا کے بچوں کو متوازن غذا کی فراہمی،بزرگوں کیلئے خصوصی امدادی اسکیم اور مزدوروں کے لیے پنشن اسکیم لارہے ہیں۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ ملک میں معذور افراد کی تعداد 50 لاکھ سے زائد ہے، ان میں 10 لاکھ بینائی سے محروم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سفید چھڑی، وہیل چیئر اور سماعت کےاآلات بھی مفت ملیں گے، احساس پروگرام کے تحت بیروزگاروں کو بلاسود قرضے،اعلی تعلیم یافتہ افراد کو اسکالر شپ ملے گی۔معاون خصوصی برائے سماجی بہبود نے یہ بھی کہا کہ محنت کشوں کی پنشن کیلئے رجسٹریشن کریں گے، بیرون ممالک میں مقیم غریب ترین محنت کشوں کیلئے رعایتی سفری ٹکٹس کا اجرا بھی احساس پروگرام کاحصہ ہے۔

مزید : قومی


loading...