مہنگائی کے حوالے سے سٹیٹ بینک کی رپورٹ تشویشناک ہے،امیر العظیم

  مہنگائی کے حوالے سے سٹیٹ بینک کی رپورٹ تشویشناک ہے،امیر العظیم

لاہور (سٹی رپورٹر) جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل اور امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیرالعظیم نے کہا ہے کہ مہنگائی کے حوالے سے سٹیٹ بنک کی تازہ رپورٹ تشویشناک ہے۔ کمر توڑ مہنگائی نے جہاں ایک طرف عید کی خوشیوں کو ماند کردیا ہے وہاں دوسری طرف عوام کی زندگی کو بھی اجیرن بنادیا ہے۔ حکمرانوں کی ناقص پالیسیاں معاشی تنگی اور صنعتی تنزلی کا باعث بن رہی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کی سخت ترین شرائط پر عمل در آمد کرنے کی وجہ سے مہنگائی کا طوفان بر پا ہے۔ جماعت اسلامی مہنگائی میں ہوشر با اضافے اور حکمرانوں کی آئی ایم ایف کی چوکھٹ پر سجدہ ریزی کے خلاف 16جون کو بھر پور عوامی مارچ کرے گئی۔

اس عوامی مارچ میں ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کریںگے۔ ملک میں مہنگائی کا سونامی آچکا ہے اور عوام تحریک انصاف کی حکومت سے مایوس ہو گئے ہیں۔ ریلیف نا م کی کوئی چیز میسر نہیں۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام کو جس تبدیلی کا خواب دکھایا گیا تھا وہ چکنا چور ہوچکا ہے۔ قرضے لے کر ترقی کا خواب کبھی شرمند تعبیر نہیں ہوسکتا۔ موجودہ حکمرانوں نے ماضی کی حکومتوں کے ریکارڈ توڑتے ہوئے محض دس ماہ کے دوران 35سوارب روپے کا قرضہ حاصل کیا ہے۔ جس کی وجہ سے ہر پاکستانی ایک لاکھ 53ہزار روپے کا مقروض ہوگیا ہے۔ ملکی معیشت دیوالیہ پن کا شکار ہے۔ امیر العظیم نے اس حوالے سے مزید کہا کہ ریاست مدینہ کی بات کرنے والوں کو چاہیے کہ و ہ سودی نظام کے خاتمے کو یقینی بنائیں۔ جب تک ملک میں سودی نظام رائج رہے گا بہتری کی کوئی امید نظر نہیں آتی۔ اسلامی طرز معیشت میں ہمارے تمام معاشی مسائل کا حل پنہاں ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...