ہم بھاگنے والے نہیں عوام کی اُمیدوں پر پورا اُتریں گے ،شاہ محمود قریشی

ہم بھاگنے والے نہیں عوام کی اُمیدوں پر پورا اُتریں گے ،شاہ محمود قریشی

ملتان ( سٹی رپورٹر)وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پی پی ، ن لیگ دونوں نے ملک کو لوٹ کر بد حال کیا۔ انہوں نے اپنی تجوریاں بھر کر ملک کو قرض دار کیا۔ ملکی بجٹ کی ایک خطیر رقم سابقہ ادوار کے قرضوں کی مد میں جا رہی ہے۔ جس کی بدولت عوام کو صحت، تعلیم ودیگر ضروریات زندگی کی فراہمی میں دشواری کا سامنا ہے۔ سابقہ دس سالوں میں ریکارڈ تعداد میں قرضے لئے گئے۔ جو کہ گزشتہ ساٹھ سالوں کی نسبت ڈبل تھے۔ ان قرضوں (بقیہ نمبر9صفحہ12پر )

کی بدولت ملک بدحالی کا شکار اور ترقی کا سفر رکا ہوا ہے۔ پاکستان کا باشعور طبقہ ساتھ دے ۔پاکستان کا باشعور طبقہ 2018ءمیں تحریک انصاف کو ووٹ دیکر اقتدار میںلایا اور انشاءاللہ پاکستان کا باشعور طبقہ اگلی دفعہ بھی تحریک انصاف پر اعتماد کرے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونین کونسل 45 رنگیل پور میں واٹر فلٹریشن پلانٹ کے افتتاح کے بعد عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سابق یوسی چیئرمین مشتاق تھہیم نے اپنی پوری برادری سمیت پیپلز پارٹی چھوڑ کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک ، مشتاق تھہیم ، قیصر بھٹہ، رانا عبدالجبار ، فاروق خان بابر، شعیب اکمل ہاشمی ، ملک ناصر بھٹہ،چودھری مقبول ارائیں،میاں جمیل احمد ، شیخ طاہر،حنیف کھوکھر،چودھری ارشد ، ریاض میتلا ودیگر شخصیات نے بھی اظہار خیال کیا۔ وزیر خارجہ نے کہا عوام نے تحریک انصاف کی حکومت پر اعتماد کیا ہے ۔ ہم بھاگنے والے نہیں۔ عوام کی امیدوں پر پورا اتریں گے ۔5سال بعد اپنی کارکردگی کی بدولت عوام کی عدالت میں جائیں گے۔ فروری میں بھارت کی جانب سے کی جانے والی جارحیت کے جواب میں ہم نے پاکستان کے مفادات ، جغرافیہ ، نظریہ اور افواج کا دفاع کیا۔ ہم ملکر عزم کرتے ہیں کے بہتر ،خوش حال اور مستحکم پاکستان بنانے کیلئے تمام توانائیاں استعمال کریں گے۔ انہوں نے کہا ماضی کی حکومتوں نے 70سال میں دعوے تو بہت کئے لیکن پاکستان میں غربت کے خاتمے کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا۔ ہم حالیہ بجٹ میں غریب ، مستحق اور نادار افراد کیلئے احساس پروگرام کا آغاز کررہے ہیں ۔ جس میں 215 پالیسیاں شامل ہیں۔ جن کی بدولت پاکستان کے بے روزگار نوجوان ، خواتین اور نادار افرا د کی کفالت ہوگی۔ انہوں نے کہا ہم ایسا بلدیاتی نظام لا رہے ہیں جس میں عوامی نمائندے با اختیار ہونگے ۔ فنڈز کی فراوانی ہوگی۔ ترقیاتی کاموں کیلئے بلدیاتی نمائندوں کو اراکین اسمبلی کا محتاج نہیں ہونا پڑے گا۔ انہوں نے کہا ماضی کے حکمرانوں نے ملتان اور بلخصوص جنوبی پنجاب کی ترقی کیلئے کچھ نہیں کیا۔ ہم نے اقتدار کے پہلے 6 ماہ میں اہلیان ملتان کیلئے نشتر 2 کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا ہے۔ جس سے جنوبی پنجاب کے عوام کی صحت کی سہولیات کی فراہمی میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا این اے 156 میں ترقیاتی کاموں کیلئے سکیموں کی تیاری کی جار ہی ہے۔ این اے 156 میں سورج کنڈ روڈ کی تعمیر کا کام گزشتہ دس سال سے زیر التواءتھا۔ وزیر خارجہ نے اس موقع پر گزشتہ دس سال سے زیر التواءسورج کنڈ روڈ کی تعمیر کا اعلان کیا ۔اور کہا حالیہ بجٹ میں سورج کنڈ روڈ کی تعمیر کیلئے خطیر رقم مختص کی جا رہی ہے۔ حالیہ بجٹ میں فنڈز کا اجراءہوتے ہی سورج کنڈ روڈ کی تعمیر کا کام شروع ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا سابقہ ادوار میں اور تحریک انصاف کے دور حکومت میں یہ فرق ہوگا کہ ہمارے کسی بھی ترقیاتی کام میں ایک روپے کا بھی کمیشن نہیں لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا ماضی گواہ ہے میرا دامن صاف ہے۔ کوئی بھی شخص میرے اوپر انگلی نہیں اٹھا سکتا۔ جب بھی اقتدار ملا اور وسائل ملے عوامی و اجتماعی ترقی پر صرف کئے۔ اور انشاءاللہ ابھی بھی تمام وسائل اور توانائیاں ملتان اور جنوبی پنجاب کی ترقی پر خرچ کریں گے۔ انہوں نے کہا اگر ہمیں 5سال عوام کی خدمت کا موقع ملا تو انشاءاللہ عوام کی عدالت میں سرخ رو ہونگے۔ عوام کی سابقہ محرومیوںکا ازالہ کریں گے۔ اور جو کچھ ہو سکا عوامی ترقی کیلئے کام کریں گے۔بعد ازاں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے یوسی 45 میں واٹر فلٹریشن پلانٹ کا افتتاح کیا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ شہباز شریف کو واپس آکر عدالتوں کا سامنا کرنا چاہیئے ،اپوزیشن کے احتجاج سے اگر ادارے مضبوط اور مہنگائی کم ہوتی ہے تو ضرور کرے پاک فوج نے دفاعی بجٹ میں کمی رضاکارانہ طور پر کی ہے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کا موقف کیاہے وہ کہہ رہی ہے ہم نے آواز اٹھانی ہے مہنگائی کے خلاف اس مہنگائی کا ذمہ دار کون ہے کیا یہ آٹھ ماہ کا تسلسل ہے یا گزشتہ دس سال کا ہے اس وقت جو معاملات چل رہے ہیں اپوزیشن کے اقدام سے کیا حالات بہتر ہوں گے کیا معیشت مستحکم ہوگی ،اگر اکھٹے ہونے سے مہنگائی کا علاج ہو سکتا ہے تو اکھٹے ہو جائیں ملک ایک مشکل وقت سے دو چار ہے ا گر شہباز شریف وطن آرہے ہیں تو ان کو آنا چاہیے۔

شاہ محمود

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...