رمضان کے الوداع ہوتے ہی مسجدوں کاخالی ہونا لمحہ فکریہ ہے، داﺅد رضوی

  رمضان کے الوداع ہوتے ہی مسجدوں کاخالی ہونا لمحہ فکریہ ہے، داﺅد رضوی

گوجرانوالہ (بیورورپورٹ) امیر جماعت رضائے مصطفے پاکستان صاحبزادہ محمد داﺅد رضوی نے کہا ہے کہ رمضان ا لمبارک کے الوداع ہوتے ہی ایک بڑی تعداد میں لوگوں کا مسجدوں سے غائب ہوجانا لمحہ فکریہ ہے‘ افسوس کہ ان لوگوں نے صیام و قیام کامقصد تقوی و پرہیزگاری نہیں سمجھا۔ انہوں نے خیبر پختونخواہ حکومت کی طرف سے 28 روزوں کے بعد عید الفطر منانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شرعی احکامات کے مطابق جان بوجھ کر قصداً روزہ چھوڑنے والے کو ایک کے بدلے مسلسل 60 روزے رکھنے کا حکم ہے تو جس نام نہاد مفتی اور وزیراعلی کے پی کے نے ہزاروں لوگوںکے روزے تڑوائے وہ کتنے بڑے گناہ کے مرتکب ہوئے۔ صاحبزادہ محمد داﺅد رضوی نے کہا کہ وزیراعظم اپنی ذاتی پسند ناپسند پرکسی وزیر سے استعفی لے سکتے ہیں تو اسلام کے رکن عظیم روزہ کی بے حرمتی کرنے والے وزراءکو برطرف کیوں نہیںکرتے۔ مگر وہ ان روزہ خوروں کو برطرف کیسے کریں گے جبکہ صوبائی وزیر کے بقول انہوں نے 28 روزوں کے بعد عیدالفطر منانے کا اعلان وزیراعظم کے حکم پر کیاتھا۔

مزید : علاقائی


loading...