بجٹ کیلئیتاجر برادری کو اعتماد میں نہیں لیا گیا، صدر راولپنڈی چیمبر

بجٹ کیلئیتاجر برادری کو اعتماد میں نہیں لیا گیا، صدر راولپنڈی چیمبر

راولپنڈی (کامرس ڈیسک)راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر ملک شاہد سلیم نے کہا ہے کہ مالی بجٹ 2019 کے حوالے سے چیمبر آف کامرس اور تاجر برادری کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔ یہ پہلا موقع ہے کہ مشاورتی اجلاس بھی نہیں بلائے گئے۔ انہوں نے کہاکہ پیر کے روز چیمبر آف کامرس میں اس معاملے پر میڈیا کو بریفنگ بھی دی جائے گی۔ اور تاجر برادری کے خدشات، تحفظات اور آئندہ کے لائحہ عمل پر اظہار خیال کیا جائے گا۔ صدر چیمبر نے کہا کہ آر سی سی آئی نے اپریل کے اوئل میں ایف بی آر اور وزارت خزانہ کو بجٹ تجاویز پیش کر دی تھیں۔ ہمیں قوی امید تھی کہ ایف بی آر اور وزارت تجارت و خزانہ بجٹ تیاری کے حوالے سے مشاورتی اجلاس بلائے گی اور ہمارا موقف بھی سنے گی۔ لیکن ایسا نہیں ہوا۔ ایسا لگتا ہے متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کو اعتما د میں لیے بغیر بجٹ تیار کیا جا رہا ہے۔ یہ قابل تشویش بات ہے۔ افراط زر میں مسلسل اضافہ وہ رہا ہے۔ اور یہ ڈبل Digitکو چھو رہا ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے پیداواری لاگت میں کئی گنا اضافہ ہو چکا ہے۔ کاروبار ٹھپ ہو رہا ہے۔ ایک سال سے زائد عرصہ گزر چکا لیکن غیر یقینی کی کیفیت ختم نہ ہو سکی۔ ملک شاہد سلیم نے کہا کہ ملک میں مہنگائی میں اضافے کے باعث بے روزگاری میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔عوام کی قوت خرید کئی گنا کم ہو گئی ہے۔ انہوں نے پھر مطالبہ کیا کہ بجٹ تاجر و عوام دوست بنایا جائے۔ کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جائے۔ اور سٹیک ہولڈرز کو بجٹ اور تجارتی پالیسی سازی میں شریک کیا جائے۔

مزید : کامرس


loading...