جسمانی معذوروں سے بچاؤ اور علاج فزیوتھراپی سے ممکن ہے:ڈاکٹر محبوبالرحمان

  جسمانی معذوروں سے بچاؤ اور علاج فزیوتھراپی سے ممکن ہے:ڈاکٹر محبوبالرحمان

پشاور(سٹی رپورٹر)فزیو تھراپی تھراپی ورزش اور واک پر زور دیتا ہے جس سے جسمانی کمزوریوں سے بچاؤ اور پٹھوں اور جسمانی طاقت بحال رہتی ہے اس طرح ذیابیطس شوگر کنٹرول کیا جاسکتا ہے اور مناسب غذا کے استعمال اور وزرش سے دل کے امراض اور کولیسٹرول کنٹرول کرنے میں مدد دیتا ہے اس طرح ورزش اور واک کی عادت سے بھر پور زندگی گزاری جاسکتی ہے اور فالج یا دل کے امراض سے بچاؤ ہوسکتی ہے جو کہ فزیو تھراپی طریقہ علاج ہی ہے خدا نخواستہ فالج ہو اور دوسری معذوریوں کی صورت میں بحالی فزیو تھراپی سے ممکن ہے فزیو تھراپی سے متعلق آگاہی بہت ضروری ہے اکثر لوگ مختلف ادویات اور طریقے آزماتے ہیں اور بہت فزیو تھراپی کیلئے رجوع کرتے ہیں تو کافی دیر ہوچکی ہوتی ہے اور پھر ان کی بحالی مشکل لگتی ہے خصوصی بچوں،پولیو سے متاثرہ بچوں بڑوں کے فالج،سٹروک،جوڑوں اور کمر کے دردوں جیسے امراض میں فزیو تھراپی ہی بہتر ین طریقہ علاج ہے جو آپ کو مہنگی اور غیر ضروری ادویات کے بغیر چلنے پھرنے اور بحالی کی طرف لیجاتی ہے ہمارے ہسپتالوں کے ڈاکٹر صاحبان کا فرض بنتا ہے کہ ان مریضوں کو بروقت فزیو تھراپی کیلئے بھیجیں تاکہ ان کی بحالی ممکن ہوسکے،فزیو تھراپی اگر ہسپتال میں دی جائے اور مریض کی ہسپتال میں داخلے کا دورانیہ کم ہوسکتا ہے خرچ کم ہوسکتا ہے جو حکومت یا مریض نے از خود برداشت کرنا ہوتا ہے ہماری حکومتیں بھی اس سلسلے میں اس شعبے کو آگے بڑھانے میں مدد دینی چاہئے کیونکہ میڈیکل کا ہر شعبہ فزیو تھراپی کے بغیر نامکمل ہے پیشتر امراض میں فزیو تھراپی کے  بغیر آپریشن ناکام رہتے ہیں اور نہ دوائی ہر مرض کا علاج ہے بلکہ دوائی اور سرجری کے ساتھ فزیو تھراپی  مکمل بحالی ممکن بناتی  ہے عوامی آگاہی سے شعبہ صحت میں پیش رفت ممکن ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...