وزیر اعلیٰ سندھ اضلاع کو قانون کے مطابق ان کے وسائل دیں:میئر کراچی

وزیر اعلیٰ سندھ اضلاع کو قانون کے مطابق ان کے وسائل دیں:میئر کراچی

کراچی(اسٹاف رپورٹر) میئر کراچی وسیم اختر نے مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعلیٰ فوری طور پر پی ایف سی اجلاس بلائیں اور ڈسٹرکٹ کو قانون کے مطابق ان کے حصے کے وسائل دیں تاکہ عوام کو شہری سہولیات فراہم کی جا سکیں، کراچی کے عوام بہت مشکل میں ہیں، میں اپنے لوگوں کو مشکلات میں نہیں دیکھ سکتا،بچوں کو تعلیم اور صحت چاہئے، عوام کو پانی اور صاف ستھرا ماحول چاہئے، حکومت نے اس شہر کے جعلی ڈومیسائل بنوا کر اپنے لوگوں کو نوکریاں دیں اور کراچی کے نوجوانوں کا حق مارا، افسوس کا مقام ہے سندھ میں ایک پارٹی کو حکومت کرتے 12 سال سے زیادہ کا عرصہ ہو چکا مگر اس کی کارکردگی صفر ہے ،جمہوریت میں عوام کا خیال اور ان کے مسائل حل کئے جاتے ہیں اس حکومت نے شہر کے مسائل میں اضافہ کیا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کی رات سفاری پارک میں تین روزہ عید فیسٹیول کے افتتاح کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن اور دیگر افسران و منتخب نمائندے بھی موجود تھے۔ پہلے دن کے فیسٹیول میں ہزاروں افراد نے شرکت کی جو رات گئے تک جاری رہا جہاں میوزیکل پروگرام کے علاوہ مختلف اسٹال بھی لگائے گئے ہیں۔ میئر کراچی نے کہا کہ شہریوں کو پینے کا پانی میسر نہیں ،سیوریج کی خراب صورتحال ہے ،شہر کچرا کنڈی میں تبدیل کر دیا گیا، اسپتالوں کا برا حال ہے،موجودہ حکومت شہریوں کی خدمت میں بری طرح ناکام ہو چکی، اس نظام کو تبدیل ہونا چاہئے، حکومت سے ایک کلینک نہیں چلتا تو جناح اسپتال کیسے چلا سکتی ہے اسی لئے وفاقی حکومت بڑے اسپتالوں کو واپس لے رہی ہے،میئر کراچی نے بے حد افسوس کا اظہار کیا کہ کراچی میں عوام کی ضروریات کے مطابق تفریح سہولتیں نہیں، کے ایم سی محدود وسائل میں کوشش کر رہی ہے کہ شہریوں کی ان ضروریات کو کسی حد تک پورا کیا جائے ،تفریحی مقاصد کے لئے مختص اراضی کو لینڈ مافیا سے خالی کرا کر پارکوں کی تعمیر پر کام جاری ہے، باغ ابن قاسم کو مکمل کرنے کے بعد جھیل پارک کی تعمیر پر کام جاری ہے، جب کہ ہل پارک کی تعمیر نو اور کڈنی ہل پارک پر تعمیراتی کام شروع کئے جارہے ہیں، سفاری پارک کو ترقی دے کر خوبصورت بنا دیا گیا ہے، سفاری پارک کے ڈائریکٹر کنور ایوب اور انتظامیہ مبارک باد کی مستحق ہے کہ وہ شہریوں کو تفریح کے موقع فراہم کرتے ہیں،انہوں نے کہا کہ سفاری پارک کی ٹیم بہت اچھا کام کررہی ہے، کراچی کے شہریوں کے لئے عید کے موقع پر ایک خوبصورت تفریح ایونٹ کا انعقاد کیا۔ یقینا ایسے پروگراموں سے فیملی اور بچے محظوظ ہوتے ہیں جن کے لئے شہر میں تفریح کے موقع بہت کم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سفاری کو ترقی دے رہے ہیں کیونکہ یہ بہترین جگہ ہے جہاں پہاڑ بھی ہیں ،آبشار ،جھیل ،میدان ،درخت ،گھاس اور جانور بھی ہیں۔ اس جگہ کو اگر ترقی دی جائے تو یہ خوبصورت تفریحی مقام بن سکتا ہے مگر حکومت کو کراچی کے شہریوں کی خوشی سے کوئی دلچسپی نہیں اسی لئے بلدیہ عظمیٰ کراچی کے اپنے وسائل بھی نہیں دیئے جارہے۔ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے آکٹرائے ٹیکس کی رقم بھی پوری مل جائے تو ہم سفاری کو بین الاقوامی سطح کا سفاری بنا دیں اس کے باوجود بلدیہ عظمی کراچی نے شہر کے بڑے پارکوں کی تعمیر پر کام کر رہی ہے اور پارکوں کی زمین کو لینڈ مافیا سے خالی کرا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ متوسط اور کم آمدنی والے طبقے کو زیادہ سہولتیں میسر آئیں انہی کی تفریحی کے لئے یہ اقدامات کئے جارہے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...