ریاست مدینہ کے دعویدار تین بھائیوں کے قاتل کو گرفتار کرنے میں ناکام ہو چکے ہیں:سینیٹر مشتاق احمد خان

ریاست مدینہ کے دعویدار تین بھائیوں کے قاتل کو گرفتار کرنے میں ناکام ہو چکے ...

چارسدہ (بیو رو رپورٹ) جماعت اسلامی کے صوبائی امیر و سنیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ ریاست مدینہ کے دعویدار تین سگے بھائیوں کے قتل میں ملوث بااثر ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام ہو چکی ہے۔ ریاست کی مثال ایک ماں کی ہے مگر ریاست مدینہ کے اندر امیر اور غریب کیلئے الگ الگ قانون ہے۔ حکومت متاثرہ خاندان کیلئے جلد از جلد شہداء پیکج کا اعلان کردیں۔ وہ فاروق اعظم چوک چارسدہ میں علی جان کلی واقعہ کے خلاف جماعت اسلامی ضلع چارسدہ کے زیر اہتمام احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر رہے تھے۔ احتجاجی مظاہرے سے ضلعی امیر محمد ریاض خان، سابق صوبائی وزیر حاجی احسان اللہ خان، مجیب الرحمان ایڈوکیٹ، ولی محمد خان، ہارون خان، فواد احمد،ظہور احمد ظریف خیل، محمد جسیم عمر زئی، بدیع الزمان، نوید خان، حلیم اللہ خان، مقتولین کی بہن ریمااور مقتول کاشف کی بیٹی خکلہ نے بھی خطاب کیا۔ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر تے ہوئے مشتاق احمد خان اور دیگر مقررین نے عمر زئی میں تین بھائیوں کے بہیمانہ قتل پر ریاستی اداروں کی کار کر دگی پر شدید تنقید کی اور کہا کہ بااثر دو ملزمان کو بیرون ملک فرار کرنے میں ریاستی اداروں نے مدد کی جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ظلم کے خلاف ہمیشہ آواز اٹھائیگی اور مذکورہ کیس میں سپریم کورٹ تک حصول انصاف کیلئے رجوع کریگی۔ انہوں نے کہاکہ پولیس کی جانب سے بنائی گئی جے آئی ٹی قاتلوں کو ریلیف دینے کے لئے بنائی گئی ہے۔متاثرہ بچوں کی تعلیم و تربیت جماعت اسلامی کی ذمہ داری ہو گی۔انہوں نے متاثرہ خاندان کو شہداء پیکج دینے کا بھی مطالبہ کیا اور دھمکی دی کہ ایک ہفتہ کے اندر اندر ملزمان کو گرفتار نہ کیا گیا تو ڈی آئی جی کے دفتر کے سامنے مظاہرہ کرینگے جبکہ 13جون سے متاثرہ خاندان کو انصاف کی فراہمی اور مہنگائی کے خلاف فاروق اعظم چوک میں احتجاجی کیمپ لگایا جائیگا۔ احتجاجی مظاہرے سے مقتول کاشف کی چھوٹی بیٹی اور بہن عمران خان سے مطالبہ کیا کہ بااثر جاگیر دار کو بیرون ملک سے گرفتار کر کے پھانسی پر چڑھا جائے 

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...