وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم اور اٹارنی جنرل آف پاکستان کی بار رکنیت منسوخ، فوری مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا گیا

وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم اور اٹارنی جنرل آف پاکستان کی بار رکنیت منسوخ، ...
وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم اور اٹارنی جنرل آف پاکستان کی بار رکنیت منسوخ، فوری مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا گیا

  


کراچی(ویب ڈیسک) ججز کے خلاف ریفرنسز کے معاملے پر کراچی بار ایسوسی ایشن نے وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم اور اٹارنی جنرل پاکستان انور منصور خان کی رکنیت منسوخ کردی اور مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا گیا۔ 

ایکسپریس کے مطابق کراچی بار ایسوسی ایشن نے وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم اور اٹارنی جنرل آف پاکستان انور منصور خان سے فوری مستعفی ہونے کا بھی مطالبہ کیا ہے اور اعلامیے میں کہا ہے کہ کراچی بار کی جنرل باڈی نے فیصلہ کیا کہ جب تک دونوں وکلا مستعفی نہیں ہوجاتے ان کی رکنیت منسوخ رہے گی۔

دوسری جانب سینئر وکلا نے بیرسٹر فروغ اے نسیم سے ان کے دفتر میں ملاقات کی جس دوران فروغ نسیم نےواضح کیا کہ ججز کے خلاف ریفرنسز سے میرا کوئی تعلق نہیں، میرے پاس ریفرنسز ایف بی آر سے آئے، دستاویزات کی تصدیقی عمل کے بعد ریفرنسز آگے بڑھائے، میرا کام صرف ریفرنسز کو آگے بھیجنا تھا، میرا پہلا تعلق بار اور پھر اس حکومتی عہدے سے ہے، ریفرنسز پر حتمی فیصلہ سپریم جوڈیشل کونسل کو کرنا ہے۔

مزید : قومی


loading...