”یہ وہ حکومت ہے جو ۔۔۔“حسن نثار نے حکومت کی کارکردگی ایک جملے میں بیان کردی

”یہ وہ حکومت ہے جو ۔۔۔“حسن نثار نے حکومت کی کارکردگی ایک جملے میں بیان کردی
”یہ وہ حکومت ہے جو ۔۔۔“حسن نثار نے حکومت کی کارکردگی ایک جملے میں بیان کردی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)حسن نثار نے حکومت کی کارکردگی ایک جملے میں بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ”یہ وہ حکومت ہے جو بیوٹی پارلر پرتو ٹیکس لگارہی ہے لیکن وکیلوں پر ٹیکس لگانے کی ہمت نہیں “، یہ ہے اس حکومت کی اوقات ،ادھرغریب بچیاں ہیں جبکہ ادھر ڈانگ ہے ، وکیل ججوں کو بھی چپیڑیں کرواتے ہیں۔

جیونیوز کے پروگرام ”میرے مطابق“میں گفتگو کرتے ہوئے حسن نثار نے کہا کہ امن عزت نفس کی قیمت پر نہیں چاہئے ہوتا ، بہتر تو یہ ہوتا کہ عمران خان اس حد تک نہ جاتے ، شاہ محمود قریشی کاخط کافی تھا ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کو خاموشی سے جو کرنے والے کام ہیں کرنے چاہئے ، اقتصادی صورتحال کو بہتر کرنے کی کوشش کرنی چاہئے ، اس وقت غیر یقینی کی صورتحال بہت زیادہ ہے ، صورتحال بہت بگڑتی جارہی ہے ، ہر شعبہ زندگی کے لوگ دیکھ رہے ہیں کہ دیکھیں کہ احتساب کا ہوتا کیاہے ؟

انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں نریندرا مودی کہا جاتا ہے لیکن یہ نریندر مودی ہوتاہے ، دنیامیں بڑے بڑے جوکر بڑے بڑے عہدوں پر رہے ہیں ، دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا دوسری بار وزیر اعظم کون بن رہاہے؟نریندر مودی ہے جو ایک غیر متوازن اور انتہا پسند ہے ، اسی طرح امریکہ کا صدر ٹرمپ اور تو اور ہمارے ملک کا تین مرتبہ وزیر اعظم رہنے والے کی کیا کوالٹی ہے ؟ منصب شخصیا ت کا تعین نہیں کرتا ۔

حکومت کی کارکردگی ایک جملے میں بیان کرنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ ”یہ وہ حکومت ہے جو بیوٹی پارلر پرتو ٹیکس لگارہی ہے لیکن وکیلوں پر ٹیکس لگانے کی ہمت نہیں “، یہ ہے اس حکومت کی اوقات ،ادھرغریب بچیاں ہیں جبکہ ادھر ڈانگ ہے ، وکیل ججوں کو بھی چپیڑیں کرواتے ہیں۔

مزید : قومی


loading...