معمولی سے جھگڑے پر اعتکاف میں بیٹھے پاکستانی نے ساتھی کو قتل کردیا

معمولی سے جھگڑے پر اعتکاف میں بیٹھے پاکستانی نے ساتھی کو قتل کردیا
معمولی سے جھگڑے پر اعتکاف میں بیٹھے پاکستانی نے ساتھی کو قتل کردیا

  


پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہ رمضان کے آخری عشرے میں لوگ اعتکاف بیٹھتے ہیں اور اپنا تمام تر وقت عبادت میں گزارتے ہیں، مگر اس ماہ رمضان میں پشاور میں اعتکاف کے دوران ایک انتہائی افسوسناک واردات کر ڈالی گئی۔ ویب سائٹ ’پڑھ لو‘ کے مطابق پشاور میں ایک مسجد میں کچھ لوگ اعتکاف بیٹھے ہوئے تھے جہاں ان میں سے دو لوگوں میں معمولی جھگڑا ہو گیا اور ایک نے دوسرے کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

بتایا گیا ہے کہ امان اللہ نامی ملزم اعتکاف کے دوران فضول گفتگو کیا کرتا تھا اور سہیل نامی مقتول اسے منع کیا کرتا تھا۔ ایک دن امان اللہ نے طیش میں آ کر سہیل کو گولیاں مار کر قتل کر دیا۔ اس واقعے میں اس سے بھی افسوسناک پہلو یہ تھا کہ ملزم کے باپ اور بھائی نے اس جرم میں اس کی معاونت کی اور اسے پستول فراہم کیا۔ تینوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور ملزم کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے پستول بھی برآمد کر لی گئی ہے جس سے اس نے مقتول کو گولیاں ماری تھیں۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور


loading...