قبائلی اضلاع میں 2 جولائی کو ہونے والے انتخابات ملتوی کئے جائیں،خیبر پختونخوا حکومت نے الیکشن کمیشن کو خط لکھ دیا

قبائلی اضلاع میں 2 جولائی کو ہونے والے انتخابات ملتوی کئے جائیں،خیبر ...
قبائلی اضلاع میں 2 جولائی کو ہونے والے انتخابات ملتوی کئے جائیں،خیبر پختونخوا حکومت نے الیکشن کمیشن کو خط لکھ دیا

  


پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)خیبر پختونخوا حکومت نے الیکشن کمیشن آف پاکستان کو  درخواست کی ہے کہ سیکیورٹی خدشات کے باعث قبائلی اضلاع میں دو جولائی کو ہونے والے انتخابات 20 دنوں تک ملتوی کر دیئےجائیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق خیبر۴ پختونخوا حکومت نے سیکیورٹی وجوہات کی بنیاد پر قبائلی اضلاع میں اگلے ماہ  20 جولائی کو ہونے والے انتخابات 20 روز کے لئے ملتوی کرنے کی درخواست کر دی دوسری طرف الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ حکومت کی طرف سے تاحال انہیں ایسی کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی تاہم خیبر پختونحوا کی حکومت کے ترجمان اور صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے ضم شدہ اضلاع میں انتخابات ملتوی کرانے کے ضمن میں الیکشن کمیشن کو لکھے جانے والے خط کی تصدیق کی ہے۔

محکمۂ داخلہ و قبائلی امور خیبر پختونخوا کی طرف سے رواں ماہ  تین جون کو لکھے گئے اس خط میں کہا گیا ہے کہ نئے ضم شدہ اضلاع میں انتخابات کو سبوتاژ کرنے کے خطرات موجود ہیں اور سرحد پار افغانستان سے بھی دہشتگردی کی کارروائیوں کو رد نہیں کیا جاسکتا، لہذا ایسی صورتحال میں ضم شدہ اضلاع میں پرامن انتخابات ممکن نہیں۔الیکشن کمیشن کو لکھے جانے والے  خط میں کہا گیا ہے کہ سرحد پار سے دہشت گردی کے خطرات، سیاسی رہنماؤں کو ممکنہ طورپر حملوں میں نشانہ بنانا، شمالی وزیرستان میں حالیہ دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ، ضم شدہ اضلاع کی لیوی فورس کا غیر تربیت یافتہ ہونا اور ان کی کمانڈ ڈپٹی کمشنرز سے ضلعی پولیس افسروں کو دینے کے عمل کے ساتھ ساتھ انضمام کے عمل میں پیچیدگیاں شامل ہیں جس کی وجہ سے 2 جو لائی کو انتخابات ممکن نہیں ہیں ۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور


loading...