حکومت ایک ظالمانہ بجٹ پیش کرنے جارہی ہے,خان صاحب کو جن لوگوں نے اقتدار دلوایا وہ چھیننے کی طاقت بھی رکھتے ہیں: پروفیسر ساجد میر

حکومت ایک ظالمانہ بجٹ پیش کرنے جارہی ہے,خان صاحب کو جن لوگوں نے اقتدار دلوایا ...
حکومت ایک ظالمانہ بجٹ پیش کرنے جارہی ہے,خان صاحب کو جن لوگوں نے اقتدار دلوایا وہ چھیننے کی طاقت بھی رکھتے ہیں: پروفیسر ساجد میر

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے امیرسینیٹرپروفیسر ساجد میرنے کہا کہ حکومت ایک ظالمانہ بجٹ پیش کرنے جارہی ہے، جس سے مہنگائی کا سونامی آئے گا، پھر وزیر اعظم صاحب کہیں گے” آپ نے گھبرانا نہیں“گزشتہ حکومت نے 12 لاکھ روپے تک سالانہ آمدن والوں کو انکم ٹیکس سے استثنیٰ دیا تھا لیکن اب وفاقی حکومت اس حد کو کم کرکے 8 لاکھ تک کرنےکاارادہ رکھتی ہے،جس سے سب سے زیادہ سرکاری طبقہ پسے گا ۔

مرکز راوی روڈ میں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے پروفیسر ساجد میر کا کہنا تھا کہ جب تک 500 ارب کے حکومتی اخراجات میں کمی نہیں کی جاتی اس وقت تک کوئی فرق نہیں پڑے گا، مجوزہ حکومتی بجٹ سے بیروزگاری بڑھے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ پہلے ٹیکس نادہندہ کے گرد گھیرا تنگ کیا جا رہا تھا لیکن اب چھوٹ دی جا رہی ہے، پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت میں ٹیکس ریکوری بڑھی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ادارے اربوں روپے کا بجٹ کھارہے ہیں،سفید ہاتھی بنے اداروں سے متعلق فیصلے کرنا ہوں گے،حکومت عوام سے کیے گئے وعدوں میں سے ایک بھی وعدے پر پورے نہیں اُتر سکی،ریاستِ مدینہ کا نعرہ لگا کر حکومت نے پوری قوم کو کنگال کر کے رکھ دیا ہے،ابھی تک کسی کو روزگار تو دیا نہیں،کسی کی تنخواہ میں اضافہ کیا نہیں،میرٹ پر عمل کیا نہیں،خان صاحب بھول رہے ہیں کہ جن لوگوں نے آپ کو اقتدار دلوایا ہے،وہ آپ سے یہ اقتدار چھیننے کی طاقت بھی رکھتے ہیں اور یہ مہنگائی کا طوفان آپ کی حکومت کو غرق کر سکتا ہے جس کے آثار پیدا ہو چکے ہیں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...