وزیراعظم کا وزارتوں اور ڈویژنز کی کارکردگی کا پھر جائزہ لینے کا فیصلہ

        وزیراعظم کا وزارتوں اور ڈویژنز کی کارکردگی کا پھر جائزہ لینے کا فیصلہ

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزارتوں اور ڈویژنز کی کارکردگی رپورٹس فوری طلب کرتے ہوئے انہیں وفا قی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کردی۔ حکومتی ذرائع کا کہنا ہے وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزارتوں اور ڈویژنز کی کارکردگی رپورٹس کے تفصیلی جائزے کا عمل دوبارہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے وفاقی وزارتوں اور ڈویژنز کی سرکاری افسران سمیت مجموعی کارکردگی کا مسلسل جائزہ لیا جائیگا۔وزیراعظم نے اس حوالے سے اپنے معاون خصوصی اسٹیبلشمنٹ ارباب شہزاد کو ذمہ داری سونپی ہے کہ وہ تمام وزارتوں و ڈویژنز کے بطور ادارہ اور وفاقی سیکرٹریز سمیت سینئر افسران کی کارکردگی رپورٹس وزیراعظم آفس اور کابینہ میں فوری پیش کریں۔اس حوالے سے آج منگل کو ارباب شہزاد وفاقی کابینہ کو پہلے مرحلے میں 11 وفاقی وزارتوں اور ڈویژنز کو دیے گئے اہداف پر عملدرآمد پر بریف کریں گے،جبکہ وزیراعظم خود اس حوالے سے متعلقہ وزراء اور سیکرٹریز سے تفصیلات بھی لیں گے۔ذرائع کے مطابق وفاقی وزارت مواصلات، آبی وسائل، ہاؤسنگ، وزارت صنعت و پیداوار، نیشنل فوڈ سکیورٹی اور وزارت تجارت کی کارکردگی رپورٹ پیش کی جائیگی۔کابینہ کو وفاقی وزارت تعلیم و تربیت، موسمیاتی تبدیلی اور وزارت صحت کی کارکردگی رپورٹ کے علاوہ پاور اور پیٹرو لیم ڈویژز کی کارکردگی پر بھی بریفنگ دی جائیگی۔وزیراعظم نے معاون خصوصی کو وفاقی وزارتوں میں سیکرٹریز اور سینئر افسران کی کارکردگی بہتر کرنے کیلئے خصوصی اقدامات کا ٹاسک بھی دیا تھا اور ہدایت کی تھی کہ سب سے بہتر کارکردگی دکھانے والے افسران کو مراعات دینے کی حکمت عملی بنائی جائے۔ وزیراعظم عمران خان نے 2018ء میں اقتدار سنبھالتے ہی تمام وفاقی وزارتوں اور ڈویژنز کی ہر تین ماہ بعد کارکرد گی کا جائزہ لینے کا فیصلہ کیاتھا تاہم اس پر ایک مرتبہ ہی عمل ہوسکا اور اب کارکردگی کے جائزہ کا سلسلہ دوبارہ شروع کیا جارہا ہے۔خیال رہے گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر 16 وزارتوں کو ناقص کارکردگی پر دوسری مرتبہ ریڈ لیٹر جاری کیا جا چکا ہے۔

وزیر اعظم فیصلہ

مزید :

صفحہ اول -